ود ہولڈنگ ٹیکس میں ایک فیصد کمی حکومتی چال ہے، تاجر برادری

October 12, 2015 5:15 pm0 commentsViews: 25

حکومت تاجروں کے درمیان اختلافات پیدا کرنے کیلئے مذاکرات کا ڈرامہ رچا رہی ہے، جاوید حاجی عبداللہ
ہڑتال کے علاوہ تمام مارکیٹوں میں بھوک ہڑتالی کیمپ لگائے جائیں گے، رہنمائوں کی مشترکہ پریس کانفرنس
کراچی(کامرس رپورٹر) حکومت کی جانب سے تاجروں میں اختلاف پیدا کرنے کیلئے مذاکرات کا ڈراما رچایا جارہا ہے‘ بینک ٹرانزکشن فیس میں ایک فیصد کمی کی پیشکش حکومتی چال ہے‘ جسے ناکام بنانے کیلئے کراچی کی تاجر برادری نے لائحہ عمل تیار کرلیا ‘ چیئرمین اسمال ٹریڈرز اور آل پاکستان کنفیکشنری ایسوسی ایشن کے چیئرمین جاوید حاجی عبداللہ کی مشترکہ پریس بریفنگ ہڑتال کے علاوہ کراچی کی تمام مارکیٹوں میں بھوک ہڑتالی کیمپ لگائیں جائیں گے‘ ود ہولڈنگ ٹیکس کے خاتمے تک جدوجہد جاری رکھنے کا عزم اس موقع پر محمود حامد نے بتایا کہ اسٹیٹ بینک کی رپورٹ حکومت کی آنکھیں کھول دینے کیلئے کافی ہے جس میں بینکوں کے فنانسگ ڈپازٹ میں 21 فیصد کمی ظاہر کی گئی ہے جبکہ گزشتہ دو ماہ کے دوران چھوٹے تاجروں نے ٹرانزکشن کے متبادل طریقوں سے اپنا کاروبار جاری رکھا ہوا ہے انہوں نے کہا کہ تاجروں کی نام نہاد قیادتیں نورا کشتی میں مصروف ہیں‘ جبکہ ود ہولڈنگ ٹیکس کے نفاذ کے بغیر حکومت کو آئندہ دو ماہ میں1.5 بلین قرضہ کی حصولی ممکن نہیں ‘اس موقع پر جاوید حاجی عبداللہ نے بتایا کہ تاجروں کے میر جعفر اور میر صادق حکومت کی گود میں بیٹھ کر یہ بھول گئے ہیں کہ کراچی سے ریونیو کی مد میں 68 سے 70 فیصد اور باقی پورے ملک سے صرف 30 فیصد ریونیو حاصلہوتا ہے جبکہ ریونیو کے سب سے بڑے اسٹیک ہولڈر ہونے کے باوجود اسکی نمائندگی پنجاب کے تاجروں کو سونپ دی گئی ہے۔

Tags: