شیوسینا کے غنڈوں نے خورشید قصوری کے میزبان پر کالک مل دی

October 13, 2015 1:58 pm0 commentsViews: 27

ممبئی میں سابق پاکستانی وزیر خارجہ کی کتاب کی رونمائی کی تقریب کے آرگنائزر کو پاکستان کا ایجنٹ قرار دیکر تشدد کا نشانہ بنایا
دھمکیوں کے باوجود تقریب کا انعقاد، پاکستان سے امن کا پیغام لیکر آیا ہوں، خورشید قصوری کا تقریب سے خطاب
ممبئی( مانیٹرنگ ڈیسک) ہندو انتہا  پسند تنظیم کے غنڈوں نے سابق پاکستانی وزیر خارجہ خورشید قصور ی کی کتاب کی تقریب رونمائی کو روکنے کا اعلان کرتے ہوئے تقریب کے منتظم سدھندراکلکرنی کو پاکستانی ایجنٹ قرار دے کر تشدد کا نشانہ بنایا اور ان کے چہرے پر کالک مل دی تاہم سدھندراکلکرنی نے کہا کہ بندوق سے نہ گولی سے ڈریں گے۔ دھمکیوں کے باوجود تقریب ضرور ہوئی، خورشید  قصوری نے کہا کہ لڑنے نہیں امن کا پیغام لے کر بھارت آیا ہوں۔ پاکستان اور بھارت9 مرتبہ  جنگ کے دہانے پر پہنچ چکے ہیں دونوں ملکوں کے روابط ختم ہونے سے خطے میں بڑی تباہی آئے گی۔ پاکستان نے طالبان کا وہ حشر کیا جو انگریز بھی نہ کر سکے۔ بھارتی میڈیا کے مطابق  انتہا پسند  تنظیم شیو سینا غنڈوں نے سدھندراکلکرنی  کو سابق پاکستانی وزیر خارجہ  خورشید محمود قریشی کی کتاب کی رونمائی سے روکنے کیلئے دھمکیاں دی تھیں اور باز نہ آنے پر کلکرنی کے چہرے پر سیاہ رنگ مل دیا شیو سینا کے رہنما سنجے رائوت نے میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ ممبئی میں سابق پاکستانی وزیر کی کتاب کی رونمائی کرنے والا شخص سدھندرا کلکرنی پاکستانی ایجنٹ ہے۔ سدھندرا کلکرنی نے خورشید قصوری کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے بتایا کہ وہ کتاب کی تقریب کی رونمائی کیلئے گھر سے نکل رہے تھے کہ ہندو انتہا پسند جماعت شیو سینا کے10 سے15 کارکنوں نے ان پر حملہ کر دیا اور میرے منہ پر سیاہی پینٹ کر دی۔ انہوں نے کہا کہ میں نے بھارتی پرچم کا لباس پہنا ہوا ہے۔ شیو سینا  نے مجھ پر نہیں بلکہ پرچم پر سیاہی پھینک کر بھارت کی توہین کی ہے۔

Tags: