کے الیکٹرک کی نجکاری پر تحفظات ہیں‘ اووربلنگ ہوتی ہے‘ خواجہ آصف

October 13, 2015 1:55 pm0 commentsViews: 18

نجی بجلی گھر تیل بچا کر مارکیٹ میں فروخت کرتے ہیں‘ ہمارا احتساب کیا جائے مگر آئی پی پیزکو فری ہینڈ نہ دیا جائے
بجلی کا شعبہ ڈاکوئوں کے ہاتھ میں نہیں دے سکتے‘ نندی پور پراجیکٹ کا جس سے چاہے آڈٹ کرالیں‘ وفاقی وزیر کا سینیٹ میں خطاب
اسلام آباد( نیوز ایجنسیاں) وفاقی وزیر پانی و بجلی خواجہ آصف نے نیپرا کے کردار کو منفی قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ آئی پی پیز نے نیپرا کی ملی بھگت سے عدالتوں سے حکم امتناع لے رکھا ہے۔ جس سے سسٹم میں خرابیاں پیدا ہو رہی ہیں ہم کہتے ہیں کہ ہمارا احتساب کیا جائے لیکن آئی  پی پیز کو فری ہینڈ نہ دیا جائے۔ نیپرا پاور ہائو سز کی پر فارمنس کا آڈٹ بھی کرائے، بجلی گھر تیل بچا کر مارکیٹ میں فروخت کرتے ہیں۔ پاور ہائوسز فائدہ عوام تک نہیں پہنچا رہے پاور سیکٹر میں جائز سرمایہ کاری آنی چاہئے۔ بجلی کا شعبہ ڈاکوئوں کے ساتھ میں نہیں دے سکتے، کے الیکٹرک کی نجکاری پر تحفظات ہیں۔ا نکار نہیں کرتا کہ اوور بلنگ ہوتی ہے۔ پیر کو ایوان بالا کے اجلاس کے دوران نیپرا کی رپورٹ پر بحث سمیٹتے ہوئے وفاقی وزیر خواجہ آصف نے کہا کہ ریگولیٹری اس لئے بنائے گئے تھے کہ اگر معاملات پرائیوٹ سیکٹر میں ہوں تو طاقتور ریگولیٹر اس پر چیک اینڈ بیلنس رکھ سکے،  آج یہ حالت ہے کہ ریگولیٹر پرائیوٹ سیکٹر کے بجائے حکومت کو ریگولیٹ کر رہے ہیں۔ نیپرا ہمارے معاملات میں مداخلت کر رہی ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہمارے دو کروڑ گھریلو صارفین ہیں اور صرف تین لاکھ کے قریب میٹر جو الیکٹرک اور ٹائم آف دی ڈے والے میٹرز میں سے70 فیصد میٹر خراب ہیں اور 1.04 فیصد میٹر خراب ہیں اور ان دو لاکھ 87 ہزار میٹروں میں سے بھی صرف600 کے قریب میٹر چیک کرکے رپورٹ بنائی ہے اور ان دو لاکھ 87 ہزار میں سے70 خراب ہیں۔ نندی پور کے حوالے سے وفاقی وزیر خواجہ آصف نے کہا کہ میں کہتا ہوں جس سے چاہے آڈٹ کرالیں۔ انہوں نے کہا کہ میں نے اس قوم کیلئے مشرف کی قید بھگتی ہے، مجھے کسی احتساب سے کوئی خوف نہیں ہے۔

Tags: