سپریم کورٹ خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے طلب کرے ایڈور ٹائزرز

October 13, 2015 2:56 pm0 commentsViews: 26

بلدیہ عظمیٰ کے افسران بھاری رشوت لے کرخلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے جاری کرتے ہیں پھر ہٹوادیتے ہیں
درخت کاٹ کر اشتہاری بورڈز نصب کرائے گئے‘ اب یکطرفہ کارروائی سے کروڑوں روپے ڈوب گئے‘ آؤٹ ڈور ایڈورٹائزرز کا مؤقف
کراچی(سٹی رپورٹر)آوٹ ڈور ایڈورٹائزرز کا کے ایم سی کی یک طرفہ کارروائیوں پرشدید احتجاج ،محکمہ ایڈورٹائزمنٹ کے افسران عدالتی احکامات کی آڑ میں ایڈورٹائزمنٹ کے کاروبار کو تباہ کر رہے ہیں۔شہر میں لگائے گئے تمام خلاف ضابطہ سائن بورڈزسرکاری افسران کی سرپرستی میں لگائے گئے ہیں،موجودہ سینئر ڈائریکٹر ایڈورٹائزمنٹ راشد خان نے اپنی سابقہ تعیناتی کے دوران مبینہ طور پر کروڑوں روپے رشوت کے عوض سینکڑوں خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے جاری کئے تھے ،حکومت سندھ اور تحقیقاتی ادارے خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے جاری کرنے والے سابقہ اور موجودہ ڈائریکٹرز کے خلاف قانونی کارروئی کریں،کے ایم سی کے اعلیٰ افسران نے محکمہ ایڈورٹائزمنٹ کے افسران کی بدعنوانیوں پر خاموشی اختیار کی ہوئی ہے ،سپریم کورٹ بلدیہ عظمیٰ سے تمام خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے بھی طلب کرے تاکہ معلوم ہو سکے کہ خلاف ضابطہ اشتہاری بورڈز کے اجازت نامے کس  سرکاری افسر نے جاری کیے، ایڈورٹائزرز نے سپریم کورٹ سے اپیل کردی۔ذرائع کے مطابق بلدیہ عظمیٰ کراچی کے محکمہ ایڈورٹائزمنٹ میں تعینات ہونے والے سینئر ڈائریکٹر محمد راشد خان نے گذشتہ دو روز کے دوران شہرکی سینٹرل آئی لینڈ پر نصب 100سے زائد ہائی ماکس(اشتہاری بورڈ)سمیت شارع فیصل پر لگے 38دیو ہیکل اشتہاری بورڈز کاٹ دیئے ذرائع کے ،مطابق کاٹے جانے والے ہائی ماکس اور اشتہاری بورڈ میں ایسے بھی اشتہاری بورڈز شامل ہیں جن کے اجازت نامے خود موجودہ سینئر ڈائریکٹر محمد راشدخان نے اپنی سابقہ تعیناتی کے دوران جاری کئے تھے محکمہ ایڈورٹائزمنٹ کا کہنا ہے کہ یہ کارروائی سپریم کورٹ کی ہدایات پر کی گئی ہے جبکہ اشتہاری بورڈز لگانے والے آوٹ ڈور ایڈورٹائزرز نے کارروائی پر تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ہم شہر میں لگائے گئے خلاف ضابطہ کسی اشتہاری بورڈ کی حمایت نہیں کرتے تاہم یک طرفہ کارروائی سے ایڈورٹائزرز کے کروڑوں روپے ڈوب گئے ہیں۔ ایڈورٹائزرز کا کہنا ہے کہ سرکاری افسران پہلے تو بھاری رشوت لیکر اشتہاری بورڈ کے اجازت نامے جاری کرتے ہیں بعد ازاں اُسے کاٹ دیتے ہیں۔

شاہراہ فیصل سے سیکڑوں سائن بورڈز ہٹا دیئے گئے
بلدیہ عظمیٰ کے عملے نے ہائی ماسک اور ڈائریکشن بورڈز بھی آپریشن کے ذریعے ہٹا دیئے
کراچی( اسٹاف رپورٹر) گورنر سندھ کے احکامات پر محکمہ لوکل ٹیکس بلدیہ عظمیٰ کراچی کا شاہراہ فیصل سے سائن بورڈز کیخلاف آپریشن سینکڑوںسائن بورڈ‘ ہائی ماسک اور ڈائریکریشن بورڈز اتار لئے گئے‘ تفصیلات کے مطابق ایڈمنسٹریٹر بلدیہ عظمیٰ کراچی سجاد عباسی کی ہدایت پر محکمہ لوکل ٹیکس کے ایم سی نے شاہراہ فیصل پر ڈر گ روڈ تا گورا قبرستا ن تک سینکڑوں سائن بورڈز اور بڑے ہائی ماسک پولز اتار دیئے گئے رات گئے سائن بورڈ ز اتارنے کے حوالے سے آپریشن کی ڈپٹی کمشنر ایسٹ آصف جان صدیقی سینئر ڈائریکٹر لوکل ٹیکس کے ایم سی عبدالرشید خان نے افسران کے ہمراہ نگرانی کی ۔

Tags: