اسمگلر کروڑوں کے کچھوے کورنگی روڈ پر چھوڑ کر فرار

October 14, 2015 2:48 pm0 commentsViews: 31

نایاب نسل کے62 کچھوے بچا لیے گئے،25 کچھوے گاڑیوں کے نیچے آکر مر گئے، کچھ لوگ لے گئے
کچھوے کی قیمت5 لاکھ روپے تک ہے، وائلڈ لائف نے زندہ بچ جانے والے کچھوئوں کو حب ڈیم میں چھوڑ دیا
کراچی( اسٹاف رپورٹر) اسمگلر مبینہ طور پر اندرون ملک سے کراچی لاکر کروڑوں روپے کے کچھوے کورنگی کاز وے کی سڑک پر چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ محکمہ جنگی حیات کی مشترکہ ٹیم نے نایاب نسل کے62 کچھوے بچا لئے، 25 کچھوے گاڑیوں کے نیچے آکر مر گئے۔ تفصیلات کے مطابق شہری اس وقت خوشگوار حیرت میں مبتلا ہوگئے جب انہوں نے سڑک کے بیچ نایاب نسل کے کچھوئوں کی بڑی تعداد کو جمع دیکھا جنہیں نے اطلاع ملنے پر ڈبلیو ڈبلیو ایف کی ٹیم نے بچا لیا۔ ڈبلیو ڈبلیو ایف کے مطابق کورنگی کاز وے سے 62 نایاب کچھوئوں کو بچا لیا گیا ہے25 کچھوے مردہ حالت میں پائے گئے ہیں امکان ہے کہ یہ کچھوے گاڑیوں کے نیچے آکر ہلاک ہوگئے ہیں۔ ماہرین کے مطابق بڑی تعداد میں کچھوئوں کی موجودگی مشکوک ہے اور امکان ہے کہ ان کچھوئوں کو مبینہ طور پر بیرون ملک اسمگل کیا جانا تھا۔ کیونکہ عالمی مارکیٹ میں ان کچھوئوں کی مالیت لاکھوں میں ہے۔ ڈبلیو ڈبلیو ایف کے ماہرین کے مطابق بر آمد ہونے والے کچھوے خشکی اور پانی کے ہیں اور ان کا تعلق وسطی ایشیاء کے کچھوے اور بلیک بونڈ کچھوئوں کی نسل سے ہے۔ ان کچھوئوں کی چین، ہانگ کانگ اور وسطی ایشیاء کے ممالک میں بڑی مانگ ہے جبکہ عالمی مارکیٹ میں ایک کچھوے کی قیمت 2سے5 لاکھ روپے کے دمیان ہے۔ بچ جانے والے کچھوے کو حب ڈیم میں چھوڑ دیا گیا ہے۔

Tags: