آلودگی پھیلانے والی فیکٹریوں کیخلاف کریک ڈائون

October 14, 2015 2:48 pm0 commentsViews: 43

ادارہ تحفظ ماحولیات نے نوری آباد میں پاور سیمنٹ کو مٹی، دھول اور زہریلی گیسز نہ روکنے پر بند کرنے کے احکامات دے دیے
حیدرآباد ریجن کی 200فیکٹریوں کو نوٹسز جاری، کاٹی کو بھی فضائی آلودگی نہ روکنے پر بلاتفریق کارروائی کا انتباہ
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ادارہ تحفظ ماحولیات حکومت سندھ ( ای پی اے سندھ) نے صوبے بھر میں آلودگی پھیلانے والی فیکٹریوں کے خلاف کریک ڈائون شروع کرتے ہوئے نوری آباد میں قائم پاور سیمنٹ فیکٹری کو مٹی، دھول اور مضر صحت گیسز کے اخراج کی روک تھام نہ کرنے پر پابندی کرنے کے احکامات جاری کر دئیے ہیں جبکہ حیدر آباد ریجن کی دو سو سے زائد فیکٹریوں کو ماحولیاتی قوانین پر عمل نہ کرنے کے باعث نوٹسز جاری کر دئیے گئے ، جن پر ضابطے کی کارروائی کے نتیجے میں آلودگی پھیلانے والی مزید فیکٹریوں کو بھی بند کرنے کے احکامات جاری کئے جا سکتے ہیں۔ دوسرے مرحلے میں آج منگل کے روز ای پی اے سندھ کے ایک اعلیٰ وفد نے اپنے ڈائریکٹر جنرل نعیم احمد مغل کی زیر قیادت کورنگی ایسوسی ایشن آف ٹریڈ اینڈ انڈسٹری کے اعلیٰ عہدیداروں بشمول قائم مقام چیئر مین کاٹی سلیم الزماں صدیقی، چیئر مین پاکستان ٹینرز ایسوسی ایشن گلزار فیروز اور زبیر چھایا سے ملاقات کی اور واضح الفاظ میں کہا کہ اب ایسی تمام فیکٹریوں کے خلاف بلا تفریق کارروائی کی جائے گی جو کسی بھی قسم کی آلودگی پھیلانے کی ذمہ دار ہیں۔ اس موقع پر صنعتی لیڈروں کو بتایا کہ اس سے قبل آلودگی پھیلانے والی فیکٹریوں کے خلاف قانونی کارروائی کا معاملہ اس لئے دب جاتا تھا کیونکہ یہ طے نہین ہوا تھا کہ صنعتیں اپنے آبی فضلے کو انفرادی ٹریٹمنٹ پلانٹ لگا کر بے ضرر ضرور بنائیں گی۔ یا اس کے لئے حکومت کی جانب سے وعدے کئے گئے مشترکہ ٹریٹمنٹ پلانٹ کے لگائے جانے کا انتظار کیا جائے گا۔

Tags: