بھارت کے شاعروں اور ادیبوں نے احتجاجاً اعزازت واپس کر دیئے

October 14, 2015 2:50 pm0 commentsViews: 27

سیکولر بھارت اب ایک انتہا پسند ہندو ریاست میں تبدیل ہو رہا ہے، پنجابی ادیب نے اپنا اعزاز واپس کر دیا
ہندو انتہا پسند تنظیمیں صرف پاکستانی شخصیات کیخلاف نہیں بلکہ بھارتی مسلمان بھی شر سے محفوظ نہیں، بھارتی دانشور
نئی دہلی( یو پی پی) سیکولر بھارت اب ایک انتہا پسند ہندو ریاست میں تبدیل ہو رہا ہے۔ ہندو انتہا پسند تنظیموں کی جانب سے صرف پاکستانی شخصیات کی مخالف نہیں کی جاتی ہے بلکہ بھارتی مسلمان بھی ان تنظیموں کے شر سے محفوظ نہیں، اس خطرے کو بھانپتے ہوئے بھارتی دانشوروں نے آوازیں اٹھانا شروع کر دی ہیں۔ پنجابی ادیب دلیپ کور نے بھی بھارت کا چوتھا بڑا سویلین پدما شری ایوارڈ واپس کر دیا۔ اب تک22 ادیب، شاعر، فنکار اور دانشور اپنے اعزازات مودی سرکار کو واپس کر چکے ہیں، بھارتی شاعر منگا لیش دبرال، کشمیری ادیب، غلام نبی خیال ، تھیٹر آرٹسٹ مایا کرشنا رائو، ادیب ادے پرکاش، ناینتر اسہگل، اشوک واجپائی، رحمن عباس، سارہ جوزف، اتمجیت سنجھ اور دیگر شامل ہیں ساہیتہ اکیڈمی کے عہدیدار بھی مستعفی ہو چکے ہیں۔