وحدت المسلمین کی وزیراعلیٰ اور گورنر ہائوس کے گھیرائو کی دھمکی

October 14, 2015 2:52 pm0 commentsViews: 13

لاوڈ اسپیکر ایکٹ کے استثنیٰ ، مجالس کے اشتہارات اور بینر لگانے کی اجازت کا نوٹیفکیشن جاری کیا جائے
زائرین کی بحفاظت کربلا روانگی کیلئے سیکورٹی فراہم کی جائے، راجہ ناصر عباس کی پریس کانفرنس
کراچی( اسٹاف رپورٹر) شیعہ علماء کونسل سندھ کے صدر علامہ ناظر عباس تقوی نے کہا ہے کہ وزارت داخلہ سندھ کے واضح اعلان کے باوجود مجالس عزاء اور جلوس عزا، لائوڈ اسپیکر ایکٹ سے مستثنیٰ ہوں گے اور مجالس کے اشتہارات، بینرز اور پوسٹرز لگانے کی اجازت ہوگی اور سبیلیں لگانے پر بھی کوئی پابندی نہیں ہوگی۔ لیکن اب تک سندھ کے کسی ڈی آئی جی، ایس ایس پی اور ڈی ایم سی کو اس سلسلے میں نوٹیفکیشن جاری نہیں کیا گیا جس کی وجہ سے شیعہ عوام میں بے چینی پائی جاتی ہے ہم وزیر داخلہ سندھ سے مطالبہ کرتے ہیں کہ اس سلسلے میں فوری نوٹیفکیشن جاری کیا جائے اگر یکم محرم الحرام سے قبل نوٹیفکیشن جاری نہ ہوا تو وزیر اعلیٰٰ ہائوس یا گورنر ہائوس کا گھیرا کریں گے۔ اس میں رکاوٹ ڈالنے کی کوششیں کی گئی تو حالات کی تمام تر ذمہ داری سندھ حکومت پر ہوگی۔ یہ مطالبہ انہوں نے منگل کو کراچی پریس کلب میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر علامہ جعفر سبحانی، علامہ شبیر حسین میثمی و دیگر بھی موجود تھے۔ علامہ ناظر عباس تقوی نے وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان سے مطالبہ کیا کہ فی الفور زائرین کو بسیں اور سیکورٹی فراہم کی جائے۔