بلدیاتی الیکشن ، پیپلزپارٹی کیخلاف ایم کیو ایم اور ارباب رحیم میں گٹھ جوڑ

October 14, 2015 3:10 pm0 commentsViews: 40

سابق وزیراعلیٰ سندھ سے ایم کیو ایم کے مذاکرات، بلدیاتی الیکشن میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ پر اتفاق
ایم کیو ایم کے وفد میں وسیم اختر، کنور نوید جمیل، محمد حسین، شبیر قائم خانی شامل تھے، ملاقات میں مختلف امور پر تبادلہ خیال ہوا
کراچی( اسٹاف رپورٹر) بلدیاتی انتخابات کیلئے پیپلز پارٹی کیخلاف ارباب رحیم کا ایم کیو ایم سے گٹھ جوڑ ‘متحدہ قومی موومنٹ کے 4 رکنی وفد نے سابق وزیراعلیٰ سندھ ارباب غلام رحیم سے کراچی میں ان کی رہائش گاہ پر ملاقات کی وفد میں بلدیاتی الیکشن کے حوالے سے مذاکرات کیلئے تشکیل دی گئی کمیٹی کے ارکان جن میں ایم کیو ایم کی رابطہ کمیٹی کے ارکان محمد حسین‘ شبیر قائم خانی‘ سینٹرل ایگزیکٹو کونسل کے انچارج وسیم اختر‘ رکن قومی اسمبلی کنور نوید جمیل شامل تھے‘ ملاقات میں بلدیاتی انتخابات میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ ‘عوامی مسائل کے حل اور سندھ کے عوام کے درمیان اتحاد و یکجہتی پروان چڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا‘ ملاقات میں دونوں جانب سے اختیارات نچلی سطح تک عوام کو منتقل کرنے اور بلدیاتی انتخابات میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ پر متفقہ طور پر اتفاق رائے پایا گیا اور یہ طے کیا گیا کہ بلدیاتی انتخابات میں سیٹ ایڈجسٹمنٹ کے مراحل دونوں جانب سے مقامی ذمے داران سے مل کر طے کریں گے اور اسے حتمی شکل دیں گے۔ ملاقات میں ایم کیو ایم کی مذاکراتی ٹیم کے ارکان نے ارباب رحیم سے بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ سندھ کے عوام بلدیاتی نظام نہ ہونے کے باعث بنیادی مسائل کا شکار ہورہے ہیں‘ بلدیاتی انتخابات کا انعقاد خوش آئند ہے‘ اس سے عوام کی مشکلات میں کمی ہوگی اور ان کے مسائل حل ہوسکیں گے۔

Tags: