محرم الحرام سندھ بھر میں سیکورٹی کیلئے 63 ہزار پولیس اہلکار تعینات

October 16, 2015 3:52 pm0 commentsViews: 20

صوبے میں 12 ہزار سے زائد مجالس ہوں گی‘ 4 ہزار ماتمی جلوس اور 13 سو سے زائد تعزیئے کے جلوس نکالے جائیں گے
کراچی میں 293 مقامات کو شیعہ اور سنی مسالک کے درمیان ممکنہ کشیدگی کے باعث انتہائی حساس قرار دیاگیا ہے
کراچی( کرائم ڈیسک) محرم الحرام کے دوران سندھ پولیس نے9,8 اور10 محرم کے ماتمی جلوسوں اور مجالس کی سیکورٹی کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی ہے جس کے مطابق سندھ بھر میں پولیس کے63 ہزار سے زائد پولیس اہلکار سیکورٹی ڈیوٹیوں پر تعینات ہوںگے۔ سندھ بھر میں 12 ہزار سے زائد مجالس منعقد ہوں گی جبکہ4 ہزار سے زائد تعزیے کے جلوس بھی نکالے جائیں گے۔ تفصیلات کے مطابق سندھ پولیس نے9,8 اور10 محرم الحرام کے دوران مجالس اور ماتمی جلوسوں کے علاوہ امام بارگاہوں کی سیکورٹی کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی ہے جس کے مطابق9,8 اور10 محرم الحرام کے دوران سندھ بھر میں63 ہزار14پولیس اہلکار سیکورٹی ڈیوٹیوں پر تعینات کئے جائیں گے جس میں سے کراچی میں26 ہزار 542 ، حیدر آباد میں6294 ، میر پور خاص میں2276 ، شہید بے نظیر آباد میں7623، سکھر میں9488 اور لاڑکانہ میں10 ہزار 791 پولیس اہلکار تعینات کئے جائیں گے۔ سیکورٹی ڈیوٹی کے دوران سندھ بھر میں پولیس کی16 سو 61 پکٹس قائم کی جائیں گی۔ 5 ہزار 724 پولیس موبائل موجود ہوں گی۔ جبکہ600 کی اضافی نفری بھی ان اہلکاروں میں شامل ہے۔ پولیس رپورٹ کے مطابق 9,8 اور10 محرم الحرام کے دوران کراچی کے 293 مقامات کو شیعہ اور سنی مسلک کے درمیان ممکنہ کشیدگی کے باعث انتہائی حساس قرار دیا گیا ہے اور ماتمی جلوسوں کو محفوظ راستہ فراہم کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔

Tags: