سیکریٹری تعلیم فضل اللہ پیچو ہو کیخلاف پرائمری ٹیچرز کا احتجاجی مظاہرہ

October 16, 2015 4:08 pm0 commentsViews: 24

محکمہ تعلیم کے دفتر میں اساتذہ کو ہراساں اور حبس بے جا میں رکھنے کے الزامات ، سیکریٹری تعلیم کی برطرفی کا مطالبہ
کراچی( اسٹاف رپورٹر) آل سندھ پرائمری ٹیچر ایسوسی ایشن کراچی ڈویژن کی جانب سے جمعرات کو پریس کلب کے باہر سیکریٹری تعلیم فضل اللہ پیچوہو کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا گیا ۔ مظاہرین نے ہاتھوں میں پلے کارڈ اور بینرز اٹھا رکھے تھے۔ جن پر سیکریٹری تعلیم کے خلاف نعرے درج تھے۔ اس موقع پر اساتذہ نے سیکریٹری تعلیم کا پتلا بھی نذر آتش کیا۔ مظاہرے سے خطاب کرتے ہوئے محمد امین کوریجو اور دیگر نے کہا کہ گزشتہ روز محکمہ تعلیم کے دفتر میں قاضی احمد سے تعلق رکھنے والے دو اساتذہ کو بلوا کر ہراساں کیا گیا۔ انہوں نے الزام عائد کیا کہ ان اساتذہ کو نہ صرف حبس بے جا میں رکھا گیا بلکہ ان پر تشدد بھی کیا گیا۔ ہم اس کی شدید مذمت کرتے ہیں پوری دنیا میں اساتذہ کو عزت کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے۔ لیکن پاکستان میں صورتحال بالکل برعکس ہے۔ انہوں نے وزیر اعلیٰ سندھ سے مطالبہ کیا کہ اس واقعہ کی تحقیقات کرائی جائیں اور سیکریٹری تعلیم کو ان کے عہدے سے ہٹایا جائے۔