امراض قلب کے اسپتال سے روزانہ ہزاروں کی ادویات چوری

October 16, 2015 4:20 pm0 commentsViews: 25

اسپتال کے بیرونی گیٹ پر سیکورٹی گارڈ کی تلاشی لینے پر نامعلوم شخص ادویات سے بھرا تھیلا چھوڑ کر فرار
سیکورٹی انچارج اور سیکورٹی آفیسر نے واقعہ سے لا علمی ظاہر کی اور اس کو انتظامیہ کا مسئلہ قرار دیا
کراچی( اسٹاف رپورٹر) قومی ادارہ برائے امراض قلب (این آئی سی وی ڈی) سے یومیہ ہزاروں روپے مالیت کی ادویات اور طبی سامان چوری کئے جانے کا انکشاف ہوا ہے۔ جمعرات کو اسپتال کے بیرونی گیٹ پر تلاشی کیلئے روکے جانے پر نامعلوم شخص آئی وی چیمبر (چھوٹی ڈرپ) سے بھرا تھیلا چھوڑ کر فرار ہوگیا۔ اسپتال انتظامیہ اور سیکورٹی افسران نے ذمہ داروں کا تعین کرنے کے بجائے خاموشی اختیار کررکھی ہے۔ تفصیلات کے مطابق قومی ادارہ برائے امراض قلب کے مرکزی داخلی دروازے سے باہر جاتے ہوئے نامعلوم شخص کو ڈیوٹی پر مامور سیکورٹی گارڈ نے شک کی بنیاد پر روکا تو مذکور شخص تھیلا پھینک کر فرار ہوگیا۔ ذرائع کے مطابق سیکورٹی عملے نے تھیلے کی تلاشی لی تو اس میں اسے اسپتال میں مریضوں کو لگائے جانیوالے50 سے زائد آئی وی چیمبر اور دیگر سامان برآمد ہوا جس کی مالیت 15 ہزار روپے سے زائد بتائی جاتی ہے۔ ادویات و سامان کی چوری سیکورٹی عملے کی کارکردگی پر سوالیہ نشان ہے۔ اس حوالے سے موقف جاننے کیلئے جب اسپتال سیکورٹی امور کے انچارج ڈاکٹر ضیاء پنہور سے رابطہ کیا تو ان کا کہنا تھا کہ یہ ان کا کام نہیں ہے۔ بطور مشیر ( کنسلٹنٹ ) کے معاملات دیکھتا ہوں۔ اس حوالے سیکورٹی آفیسر مجتبیٰ اور انتظامی افسران ہی بہتر بتا سکتے ہیں۔ سیکورٹی آفیسر مجتبیٰ نے یہ کہہ کر جان چھڑالی کہ یہ انتظامیہ کا مسئلہ ہے‘ ان کا نہیں‘ اس لئے وہ کچھ نہیں کہہ سکتے۔

Tags: