کرنسی ایکسچینج کمپنیوں کو15 جنوری تک ڈالر درآمد کرنے کی اجازت مل گئی

October 16, 2015 4:22 pm0 commentsViews: 19

اسٹیٹ بینک نے کرنسی ایکسچینج کمپنیوں کی درخواست پر ڈالر کی درآمد میں تین ماہ کی توسیع کر دی
ڈالر کی درآمد سے مارکیٹ میں استحکام پیدا ہوگا اور ڈالر کی شرح تبادلہ 102 سے103 روپے کے درمیان رہی
کراچی( کامرس رپورٹر) اسٹیٹ بینک آف پاکستان نے کرنسی ایکسچینج کمپنیوں کو مزید تین ماہ کیلئے ڈالر درآمد کرنے کی اجاز ت دے دی ہے۔ اب تمام مجاز کرنسی ایکسچینج کمپنیاں15 جنوری2016 تک مزید تین ماہ کیلئے مرکزی بینک کی جانب سے منظور مزید تین ماہ کیلئے مرکزی بینک کی جانب سے منظور کردہ کرنسیوں کے عوض امریکی ڈالر درآمد کرسکیں گی۔ واضح رہے کہ رواں مالی سال کے آغاز پر مقامی مارکیٹ میں ڈالر کی طلب میں زبردست اضافہ ہوگیا تھا جس کے باعث امریکی ڈالر کی قدر میں نمایاں اضافہ ہوگیا اور پاکستانی روپے کی قدر کم ہونے لگی تھی‘ پاکستان کرنسی کی قدر میں کمی کے اس مسئلے پر قابو پانے کیلئے27جولائی2015 ء کو اسٹیب بینک آف پاکستان نے متعدد بڑی مقامی کرنسی ایکسچینج کمپنیوں کو تین ماہ کیلئے ڈالر درآمد کرنے کی اجازت دے دی تھی‘ کرنسی ایکسچینج کمپنیوں کو تین ماہ کے لئے ڈالر درآمد کرنے کی اجازت ملنے کے بعد پاکستان روپے کی قدر میں بڑی حد تک استحکام آگیا تھا اور ڈالر کی شرح تبادلہ102 سے103 روپے کے درمیان رہی‘ ڈالر درآمد کرنے کی اجازت کی مدت 15 اکتوبر کو ختم ہورہی تھی‘ اس موقع پر فورکس ایکس چینج کمپنیوں نے اسٹیٹ بینک سے درخواست کی کہ ایکسچینج کمپنیوں کو ڈالر درآمد کرنے کیلئے ملنے والی اجازت کی مدت میں مزید توسیع کی جائے۔

Tags: