کالا باغ ڈیم کے نام پر سیاست چمکائی جارہی ہے‘ وزیر اعلیٰ سندھ

October 16, 2015 4:40 pm0 commentsViews: 26

بعض سیاستدان کالاباغ ڈیم کا راگ الاپ کر بلدیاتی انتخابات میں سیاسی فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں‘ تین اسمبلیاں اسے مسترد کرچکی ہیں
ڈی جی نیب کی جانب سے 22 بلین روپے کی زمین کی غیر قانونی الاٹمنٹ کا مقصد سندھ حکومت کو بدنام کرنا ہے‘ جام صادق پل کے افتتاح کے موقع پر گفتگو
کراچی( اسٹاف رپورٹر) وزیر اعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے کہا ہے کہ کالا باغ ڈیم کا ایشو مردہ ہو چکا ہے مگر بعض سیاستدان اس کا راگ الاپ کر بلدیاتی انتخابات میں سیاسی فائدہ اٹھانا چاہتے ہیں یہ بات ریکارڈ پر ہے کہ تین اسمبلیوں نے اسے مسترد کر دیا ہے۔ کالا باغ ڈیم کی بحالی کی بات صرف سیاست چمکانے کی حد تک ہے۔ چند لوگ دوبارہ اس کو ایشو بنانا چاہتے ہیں یہ عناصر صرف بلدیاتی انتخابات کے دوران سیاسی ہمدردیاں حاصل کرنا چاہتے ہیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے جمعرات کو کورنگی روڈ پر جام صادق پل جس کا حصہ کے ایم سی نے دوبارہ تعمیر کیا ہے کے افتتاح کے موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتے ہوئے کیا۔ ایک سوال پر وزیر اعلیٰ نے بتایا کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان کی ہدایت کے تحت سرکاری افسران کی تقرری و تبادلوں پر پابندی عائد کر دی گئی ہے۔ یہ اقدام اس لئے کیا گیا ہے کہ بلدیاتی الیکشن کو شفافا انعقاد کو یقینی بنایا جا سکے۔ مگر پیپلز پارٹی مخالف قوتیں اتحاد تشکیل دے کر غیر ضروری واویلا کر رہی ہیں انہوں نے کہا کہ ماضی میں13 سیاسی جماعتوں نے پیپلز پارٹی کے خلاف اتحاد بنایا تھا۔ اور اس وقت بھی اس طرح کا اتحاد تشکیل دیا گیا ہے۔ مگر پیپلز پارٹی کو اس کی پرواہ نہیں ہم سیاسی لوگ ہیں اور ان کا سیاسی طور پر مقابلہ کریں گے۔ اور کامیابی سے ہمکنار ہوں گے،۔ ڈی جی نیب کراچی کرنل ( ر) سراج النعیم کے 22 بلین روپے کی زمین کی غیر قانونی الاٹمنٹ سے متعلق الزامات کے حوالے سے پوچھے گئے سوال کے جواب میں وزیر اعلیٰٰ سندھ نے کہا کہ ان کے بیان کا مقصد سندھ کو بدنام کرنا ہے۔ ان جیسی شخصیت کو یہ زیب نہیں دیتا کہ وہ اس طرح کے مبالغہ آمیز بیانات جاری کریں۔

Tags: