مواچھ گوٹھ ایدھی قبرستان میں لاوارث افراد کی قبروںکی تعداد 80 ہزار ہوگئی

October 17, 2015 4:12 pm0 commentsViews: 54

لاوارث میتوں کی نماز جنازہ گورکن خود ہی پڑھا دیتے ہیں‘ ہر قبر کی شناخت فقط ایک نمبر ہے جو ہر گزرتے دن کے ساتھ بڑھتا رہتا ہے
ورثاء کا 15 دن تک انتظار کرنے کے بعد لاوارث لاش کی تصویر بناکر تدفین کردی جاتی ہے‘ کوئی تلاش میں آئے تو تصویر دکھا دی جاتی ہے
کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) کراچی میں مواچھ گوٹھ کے قریب ایک شہر خموشاں ایسا بھی ہے جہاں 30 سال کے دوران80 ہزار نامعلوم افراد دفن کئے جاچکے ہیں۔ یہ بد نصیب کون تھے اور کہاں سے آئے تھے کچھ معلوم نہیں۔ یہ ہے معروف سماجی رہنما عبدالستار ایدھی کا نامعلوم افراد کا قبرستان نامعلوم افراد ابدی نیند سو رہے ہیں۔ اس قبرستان میں ہر قبر کی شناخت فقط ایک نمبر ہے اور یہی وہ نمبر ہے جو ہرگزرتے دن بڑھتا جارہا ہے۔ 30 سال سے کام کرنیوالے گورکن محمد سلیم کے مطابق وہ 40 ہزار سے زائد مردوں کودفنا چکا ہے۔ لاوراث میتوں کی نماز جنازہ گورکن خود ہی پڑھا دیتا ہے۔ مواچھ گوٹھ کا قبرستان8 ایکڑ پر مشتمل ہے۔ ایدھی سرد خانے میں لائی گئی لاوارث لاش 15 دن ورثا کے انتظار کے بعد شناخت کے لئے ایک تصویر بنا کر ا قبرستان میں دفن کردی جاتی ہے‘ اگر کوئی اپنے پیارے کو تلاش کرتا ہوا یہاں آجائے اور تصویر سے شناخت لے کر اسے مرحوم کی قبرستان تک پہنچادیا جاتا ہے‘ اگر ورثاء چاہیں تو لاش کی تدفین کسی دوسرے قبرستان میں بھی کرسکتے ہیں۔

Tags: