کراچی دنیا کے غلیظ شہروں میں ٹاپ پانچ میں شامل

October 17, 2015 4:13 pm0 commentsViews: 26

شہر کی صفائی ستھرائی میں کے ایم سی اور ڈی ایم سیز سنگین نوعیت کی مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کررہے ہیں
صفائی ستھرائی پر مامور افسران کرپشن میں ملوث ہیں، شہر میں کچرا جلانے، پانی سڑکوں پر بہانے میں مصروف ہیں
کراچی(اسٹاف رپورٹر)ورلڈ ہیلتھ آرگنائزیشن کی جانب سے کراچی کو دنیا کے غلیظ شہروں میںٹاپ پانچ میں شامل کیا گیا ہے ، صفائی وستھرائی کی بدترین حکمت عملی سے لیکر کچرا جلانے کے بدترین طرز عمل کو اس شہر کی تباہی قرار دیا گیا ہے جبکہ دنیا کا یہ واحدشہرہے جہاںبرساتی نالوں کو کچرا پھینکنے اور جلانے کے لئے استعمال کیا جاتا ہے، مسلسل اس سلسلے کے جاری رہنے سے نا صرف موسمی برے اثرات بلکہ مختلف نوعیت کے کینسرز اور ہر تیسرے فرد کوہیپاٹائٹس کاشکارہونے سے محفوظ کرنا مشکل ہو جائے گا ، آئندہ دو تین سے سالوں میں صفائی وستھرائی سمیت صاف پانی کی فراہمی کے حوالے سے حکومتی و بلدیاتی سطح پر سخت ایکشن لینا نا گزیر ہو گیا ہے۔ میونسپل قوانین اس قدر سخت ہیں کہ گھر کے باہر پانی بہانے پر بھی جرمانہ و سزا دی جاسکتی ہیں مگر کے ایم سی اور ڈی ایم سیز کے ایڈمنسٹریٹرز، میونسپل کمشنر ز،سنگین نوعیت کی مجرمانہ غفلت کا مظاہرہ کر رہے ہیں دوسری طرف علاقائی اسسٹنٹ کمشنرزمیونسپل مجسٹریٹ کے اختیارات کو استعمال کرنے میں غافل نظر آتے ہیں ان کی جانب سے ڈی ایم سیز انتظامیہ کو پابند نہیں کیا گیا ہے کہ وہ شہر کی صفائی ستھرائی سمیت دیگر میونسپل جرائم کے حوالے سے چالا ن جاری کرکے میونسپل قوانین پر عمل درآمد یقینی بنائیں ‘صفائی وستھرائی پر معمور افسران اوپر سے نیچے تک کرپشن میں ملوث ہیں اور یہ سلسلہ حکام بالا کی آشیر باد سے جاری ہے۔

Tags: