نیب کو غیر قانونی تعمیرات کیخلاف اہم شواہد مل گئے

October 19, 2015 4:29 pm0 commentsViews: 21

سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی کے افسران نے منظور کا کا کیخلاف وعدہ معاف گواہ بننے کی پیشکش کر دی
کراچی( نیوز ایجنسیاں) کراچی میں غیر قانونی تعمیرات کی تحقیقات میں نیب حکام کو اہم شواہد مل گئے ہیں جبکہ قائم مقام ڈی جی سندھ بلڈنگ کنٹرول اتھارٹی ممتاز حیدر سمیت کئی افسران نے نیب حکام کو منظور قادر کاکا کے خلاف وعدہ معاف گواہ بننے کی  پیشکش کی ہے، کراچی میں غیر قانونی تعمیرات کی تحقیقات میں بارہ سے زائد بلڈروں کو بھی نیب کو اپنے بیانات ریکارڈ کرا دئیے ہیں۔ بلڈرز نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے خلاف ضابطہ تعمیرات کیلئے سابق ڈی جی منظور قادر کاکا کو بھاری رقوم بطور رشوت دیں۔ ذرائع کا کہنا ہے کہ تحقیقات میں اس بات کا بھی انکشاف ہوا ہے کہ کاکا نے بیرون ملک فرارہونے کے باوجود بلڈروں سے حصہ وصول کیا ہے کرپشن کی بہتی گنگا میں ہاتھ دھونے والوں میں کاکا کے ساتھ قائم مقام چیف کنٹرول ممتاز حیدر نے بھی خوب ہاتھ دھوئے۔ ذرائع کے مطابق ممتاز حیدر سمیت ایس بی سی اے کے کئی افسران نے نیب حکام کو پلی بارگین کی پیشکش کی ہے۔  نیب حکام کو بلڈروں کی نمائندہ تنظیم کے عہدیداروں سمیت نو بلڈروں نے بیان ریکارڈ کرا دیا۔ منظور قادر کاکا اور ممتاز حیدر کیلئے صفدر مگسی، عمران رضوی، اقبال بالا، فیاض علوی، علی مہدی، کاظمی، فرحان قیصر، منیر گھمرو  نے بلڈروں سے پیسے لئے۔

Tags: