بلدیاتی الیکشن ن لیگ میں پریشر گروپ بن گیا‘ پارٹی رہنمائوں کیخلاف سرگرم

October 20, 2015 3:46 pm0 commentsViews: 26

پریشر گروپ وزیراعظم کی جانب سے بلدیاتی انتخابات کیلئے ٹکٹوں کی تقسیم پر عملدر آمد ہونے نہیں دے رہا ہے
کراچی ڈویژن کے اجلاس میں پریشر گروپ نے ہلڑ بازی کی‘ غیر ضروری دبائو ڈال کر پارٹی فیصلوں پر اثر انداز ہورہا ہے‘ ن لیگ
کراچی( نیوز ڈیسک) مسلم لیگ ن کا کراچی میں بلدیاتی انتخابات کے موقع پر پریشر گروپ سامنے آگیا جس کی کوشش ہے کہ مسلم لیگ ن کے موجودہ عہدیدار اچھے نتائج نہیں دے سکیں تا کہ بلدیاتی انتخابات کے بعد ان پارٹی رہنمائوں اور عہدیداران کے خلاف تحریک چلائی جا سکے۔ مسلم لیگ ن کے ذرائع نے بتایا کہ یہ پریشر گروپ غیر ضروری دبائو ڈال کر پارٹی فیصلوں پر اثر انداز ہو رہا ہے حال ہی میں کراچی ڈویژن کی جانب سے مسلم لیگ ہائوس میں منعقدہ ورکرز اجلاس میں جس کے مہمان خصوصی سابق وفاقی وزیر سینیٹر مشاہد اللہ تھے۔ اس میں جو ہلڑ بازی ہوئی اس میں بھی یہ پریشر گروپ ملوث تھا ذرائع نے بتایا کہ بلدیاتی امیدواروں کو ٹکٹوں کی تقسیم کے معاملے میں بھی پریشر گروپ کا بہت زیادہ دبائو ہے۔ ٹکٹوں کے معاملے پر وزیر اعظم نواز شریف نے فارمولا طے کیا تھا کہ ہر ضلع کے رکن قومی و صوبائی اسمبلی اور اس ضلع کے صدر و جنرل سیکریٹری اپنے ضلع کے بلدیاتی امیدواروں میں ٹکٹوں کی تقسیم کے ذمہ دار ہوں گے۔ لیکن پریشر گروپ کی وجہ سے اس فارمولے پر بھی عمل نہیں ہو پا رہا ہے ذرائع نے بتایا کہ اسی طرح کے پریشر گروپ اندرون سندھ کے مختلف اضلاع میں بھی بنے ہوئے ہیں جو وہاں آزاد پینل پر امیدواروں کو کھڑا کرکے انہیں سپورٹ کر رہے ہیں گزشتہ دنوں مسلم لیگ نظریاتی گروپ بھی سامنے آیا جس کی وجہ سے میر پور خاص اور دیگر اضلاع میں مسلم لیگی کارکن کا آپس میں تصادم ہوگیا تھا۔

Tags: