صدر میں کروڑوں روپے مالیت کا پارکنگ پلازہ ویران مفت شٹل سروس بھی آباد نہ کرسکی

October 20, 2015 3:48 pm0 commentsViews: 19

مختلف مارکیٹوں اور گلیوں میں قائم غیر قانونی پارکنگ کی وجہ سے شہریوں میں پارکنگ پلازہ میں گاڑیاں کھڑی کرنے کارجحان فروغ نہیں پاسکا
پارکنگ پلازہ میں گاڑی مالکان کیلئے صاف ستھرے باتھ روم‘ انتظار گاہ اور نماز کی سہولت کے باوجود عوامی توجہ مرکوز نہیں ہورہی ہے
کراچی( نیوز ڈیسک) صدر کے علاقے میں کروڑوں روپے مالیت کی لاگت سے تعمیر کئے گئے بلدیہ عظمیٰ پارکنگ پلازہ کو مفت شٹل سروس بھی آباد نہیں کر سکی۔ شہریوں کی عدم دلچسپی کی وجہ سے شٹل سروس بھی غیر فعال ہے۔ تفصیلات کے مطابق بلدیہ عظمیٰ کراچی کی جانب سے77 کروڑروپے کی کثیر رقم سے صدر کے علاقے لائنز ایریا میں تعمیر کئے گئے ویران پارکنگ پلازہ کو آباد کرنے کیلئے مفت شٹل سروس کی حکمت عملی بھی کار گر ثابت نہ ہو سکی، صدر کی مختلف مارکیٹوں اور اطراف کی گلیوں میں غیر قانونی طور پر قائم پارکنگ کی وجہ سے شہریوں میں اپنی گاڑیاں پارکنگ پلازہ میں کھڑی کرنے کا رجحان فروغ نہیں پا رہا۔ شہری انتظامیہ کی جانب سے پارکنگ پلازہ میں گاڑیاں پارک کرکے صدر کی مختلف مارکیٹوں میں جانے والے شہریوں کی سہولت کے لئے حال ہی میں شروع کی گئی مفت شٹل سروس بھی غیر فعال ہے۔ پارکنگ پلازہ سے زینب مارکیٹ شاپنگ سینٹر تک شروع کی گئی مفت شٹل سروس میں2 گرین سی این جی بسیں شامل کی گئیں لیکن شہریوں میں پارکنگ پلازہ کی سہولت سے استفادہ کرنے کا رجحان پیدا نہیں ہوا ہے۔ پلازہ کے سی سی ٹی کنٹرول روم میں مانیٹرنگ کے فرائض انجام دینے والے ملازمین نے بتایا کہ لائنز ایریا سے آنے والے سڑک، پارکنگ پلازہ کے مرکزی راستے، زیر استعمال تمام بالائی منزلیں کی16 سی سی ٹی وی کیمروں کی مدد سے نگرانی کی جاتی ہے۔ گاڑیوں کے مالکان کے لئے صاف ستھرا ہاتھ روم، انتظار گاہ، وضو اور نماز کی سہولت بھی فراہم کی گئی ہے اس کے باوجود عوامی توجہ اس جانب مبذول نہیں ہو رہی ۔

Tags: