کراچی میں ٹریفک نظام کو جدید خطوط پر استوار کرنیکا فیصلہ مزید 6ہزار اہلکار بھرتی ہوں گے

October 20, 2015 3:51 pm0 commentsViews: 33

بلو لائن اور انٹر سٹی میں ٹرانزٹ منصوبوں پر عملدر آمد کیلئے شراکت دار کمپنیوں سے معاہدوں کو حتمی شکل دینے کیلئے کارروائی مکمل
ٹریفک اہلکاروں کے تحفظ کیلئے جامع حکمت عملی تشکیل اور ٹریفک سنگلز پر ایک سے زائد پولیس اہلکاروں کی تعیناتی یقینی بنائی جائے‘ وزیر اعلیٰ سندھ
کراچی(اسٹاف رپورٹر) حکومت سندھ نے کراچی کے عوام کوجدید سفری سہولیات فراہم کرنے کیلئے شہر کے ٹریفک نظام میں وسیع پیمانے پر توسیع اور ٹریفک نظام کوجدید خطوط پر استوار کرنے کا فیصلہ کرلیا ہے،جس کے تحت شہر میں ٹریفک کی بلاتعطل روانگی کو یقینی بنانے کیلئے مزید 6ہزار ٹریفک پولیس اہلکار بھرتی کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا ہے،جن کی سیکیورٹی کیلئے بھی فول پروف انتظامات کئے جائیں گے۔کراچی شہر میں جدید سفری سہولتیں فراہم کرنے کیلئے جاری ترقیاتی منصوبوں (بی آر ٹی)پر بھی پیش رفت کو تیز سے تیز ترکرنے اور اورینج لائین منصوبے پر گراؤنڈ ورک آئندہ ماہ5نومبر سے شروع کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے،جس کا سنگ بنیاد وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ رکھیں گے۔علاوہ ازیں نومبر کے ہی مہینے میں یلو لائین اور انٹر سٹی بس ٹرانزٹ منصوبوںپر عملدرآمد کیلئے متعلقہ شراکت داروںسے معاہدے کو حتمی شکل دینے کیلئے ضابطے کی تمام تر کاروائیاں مکمل کرلی گئی ہیں۔یہ فیصلے آج وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ کی زیر صدارت ٹریفک نظام میں بہتری لانے اور کراچی کے شہریوں کو ٹریفک کی جدید سہولیات فراہم کرنے سے متعلق وزیراعلیٰ ہائوس میں منعقد ایک اعلیٰ سطحی اجلاس میں کئے گئے،اجلاس میں صوبائی وزیر برائے ٹرانسپورٹ ممتاز حسین جکھرانی، انسپکٹر جنرل سندھ پولیس غلام حیدر جمالی، وزیراعلیٰ سندھ کے پرنسپل سیکریٹری علم الدین بلو، سیکریٹری ٹرانسپورٹ طحیٰ فاروقی،کمشنر کراچی شعیب احمد صدیقی، ڈی آئی جی ٹریفک ڈاکٹر امیر شیخ اور دیگر متعلقہ افسران نے شرکت کی۔اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ نے ٹریفک پولیس افسران کو ٹریفک قوانین پر سختی سے عملدرآمد کرانے اورشہر میں ٹریفک روانی کو موثر طریقے سے رواں دواں رکھنے کیلئے قانون میں موجود اپنے اختیارات کا بھرپور طریقے سے استعمال کرنے کے احکامات جاری کرتے ہوئے کہا کہ اگر ٹریفک قوانین میں کسی قسم کی کمزوری ہے تو اسکو دور کرنے کیلئے قوانین میں ترمیم کی جا سکتی ہے۔وزیراعلیٰ سندھ نے ٹریفک پولیس اہلکاروں کی ٹارگٹ کلنگ کا سختی سے نوٹسلیتے ہوئے آئی جی سندھ پولیس کو ان اہلکاروں کے تحفظ کیلئے جامع حکمت عملی تشکیل دینے اور انہیں بلٹ پروف جیکٹس ، ہیلمٹ اور ہتھیارفراہم کرنے کے ساتھ ساتھ ٹریفک سگنلز پر ایک سے زائد اہلکاروں کی تعیناتی کو یقینی بنانے کے احکامات جاری کئے۔

Tags: