رینجرز اہلکار کے قاتل کو دوبارہ سزائے موت کا حکم

October 20, 2015 4:09 pm0 commentsViews: 22

سنگین مقدمات میں ملوث مجرم راشد کو27 اکتوبر کو کوٹ لکھپت جیل لاہور میں پھانسی دینے کی ہدایت
مقتول کے اہل خانہ کی طرف سے معافی کی اطلاع پر جیل حکام نے سزائے موت پر عملدرآمد روک دی تھی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج وسطی ذیشان اختر خان نے قتل سمیت دیگر سنگین مقدمات میں ملوث اور رینجرز اہلکار کو قتل کرنے والے ملزم راشد نذیر سزائے موت کے فیصلے کو برقرار رکھتے ہوئے دوبارہ سزائے موت کا حکم سناتے ہوئے 27 اکتوبر کو کوٹ لکھپت جیل لاہور میں صبح فجر کے وقت پھانسی دینے کا حکم سنایا اس سے قبل بھی عدالت نے پھانسی دینے کا حکم دے چکی ہے‘ مقتول کے اہل خانہ کی طرف سے معافی کی اطلاع پر جیل حکام پھانسی روک کر عدالت کو اطلاع کردی تھی جس کے بعد پھانسی نہ دینے پر جیل سپرنٹنڈنٹ کوٹ لکھپت جیل لاہور اور جیل سپرنٹنڈنٹ سینیٹرل جیل کراچی کو شوکاز نوٹس جاری کئے تھے ار دونوں جیل حکام کو جواب داخل کرنے کا حکم دیا تھا‘ عدالت نے سخت برہمی کااظہار کیا تھا کہ سزائے موت کے عدالتی حکم پر عملدرآمد کیوں نہیں کیا گیا جیل سپرنٹنڈنٹ کو ٹ لکھپت جیل نے عدالت کو بذریعہ فیکس اطلاع دی تھی کہ مقتول کے اہل خانہ نے جیل آکر ملزم کو معاف کردیا‘ معاف کرنیوالوں میںمقتول کے والدین‘ بھائی بہن‘ شامل تھے یہ خود جیل آئے تھے ملزم کو معاف کرنے کیلئے عدالت نے فیکس وصول کرنے کے بعد فیصلہ محفوظ کرلیا۔

پھانسی کی سزا پانے والے مجرم کے
ایک بار پھر ڈیتھ وارنٹ جاری کردیئے
کراچی (اسٹاف رپورٹر)کراچی کی مقامی عدالت نے پھانسی کی سزا پانے والے مجرم کے ایک بار پھر ڈیتھ وارنٹ جاری کردیئے ہیں ۔مجرم راشد کو ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج وسطی نے سن 2000 میں تھانہ گلبرگ کی حدود میں رینجرز اہلکار عنایت کو قتل کرنے کے الزام میں سزائے موت سنائی تھی اس سے قبل مجرم کے ڈیتھ وارنٹ 14 اکتوبر کے لئے جاری کئے گئے تھے تاہم اہل خانہ کی جانب سے مقتول کے اہل خانہ نے معاملات طے ہونے کی درخواست پر سزا معطل کی گئی تھی تاہم عدالت نے مجرم کے 27 اکتوبر تک کے لیئے ڈیتھ وارنٹ جاری کیے ہیں مجرم راشد کے وارنٹ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ ایند سیشن جج سینٹرل ذیشان اختر نے جاری کیے مجرم کوٹ لکھپت جیل میں ہے جہاں اسے پھانسی کی سزا دی جائے گی

Tags: