عوامی کالونی کے مرکزی جلوس کے دوران اچانک بجلی غائب – لوڈ شیڈنگ کے دیگر واقعات

October 21, 2015 4:24 pm0 commentsViews: 26

کے الیکٹرک کی نااہلی کے باعث جلوس کے راستے میں اندھیرا سیکورٹی رسک بن گیا
ایس پی لانڈھی کا انتظامیہ سے فوری رابطہ، بجلی بحالی کے بعد جلوس روانہ ہو گیا
کراچی(کرائم رپورٹر)کے الیکٹرک کی نااہلی،عوامی کالونی کے علاقے کے ایریا سے محرم الحرام کے سلسلے میں نکالے جانے والا مرکزی جلوس کے دوران بجلی بند ہوگئی،جس کی وجہ سے سڑکوں اور علاقے میں اندھیرا چھا گیا جس کی وجہ سے سیکورٹی رسک بن گیا،جلوس کی سیکورٹی کے ہمراہ ایس پی لانڈھی افنان امین نے فوری طور پر کے الیکٹرک حکام سے رابطہ کرکے بجلی بحال کرائی،جلوس خیر و خیریت سے سگرہ امام بارگاہ پر رات گئے اختتام پذیرہوا،اس موقع پر ایس پی لانڈھی افنان امین نے بتایا کہ جلوس کے گذر گاہوں پر اہلکاروں کو تعنیات کیا گیا تاہم بجلی بند ہونے کی وجہ سے علاقے میں اندھیرا چھا گیا تھا،جوسیکورٹی رسک بن گیا تھا۔مزید بتایا کے کورنگی لانڈھی میں تمام امام بارگاہوں اور جلوسوں کے گذر گاہوں کی سیکورٹی سخت کردی گئی ہے۔

محرم میں بھی غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ جاری، عوام سراپا احتجاج
رات گئے ایم اے جناح روڈ اور جامع کلاتھ کے رہائشی طویل لوڈشیڈنگ پر سٹرکوں پر نکل آئے
حکومت مجالس اور جلوس کے اوقات میں بجلی کی طویل بندش کا نوٹس لے، مظاہرین
کراچی( کرائم رپورٹر) کراچی میں محرم الحرام کی مجالس کے دوران کے الیکٹرک کی جانب سے لوڈشیڈنگ نہ کرنے کا دعویٰ دھرے کا دھرا رہ گیا‘ رات گئے مختلف علاقوں میں غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کا سلسلہ جاری عوام سراپا احتجاج‘ تفصیلات کے مطابق کراچی میں محرم الحرام کی مجالس کا سلسلہ شروع ہوگیا اس دوران کے الیکٹرک کی جانب سے لوڈشیڈنگ نہ کرنے کے دعوے دھرے کے دھرے رات گئے ایم اے جناح روڈ جامع کلاتھ کے رہائشی بجلی کی طویل اور غیر اعلانیہ لوڈشیڈنگ کیخلاف سڑکوں پر نکل آئے اور ایک ٹریک کو ہر قسم کی ٹریفک کیلئے بند کردیا‘ مظاہرین کا کہنا تھاکا حکومت محرم میں مجالس اور جلوسوں کے دوران بجلی کی طویل بندش کا نوٹس لے علاقہ مکینوں کا کہنا تھا کہ کے الیکٹرک نے محرم میں مجلس کے دوران لوڈشیڈنگ نہ کرنے کا اعلان کیا تھا مگر لوڈشیڈنگ اسی طرح جاری ہے بار بار شکایات کے باوجود کوئی عمل درآمد نہیں ہورہا ہے‘ ایک گھنٹے تک جاری رہنے والا احتجاج انتظامیہ سے مذاکرات کے بعد ختم کردیا گیا اور مظاہرین پرامن طور پر منتشر ہوگئے۔

لیاقت آباد کے مکینوں کا طویل لوڈشیڈنگ کیخلاف احتجاج
بڑی تعداد میں مشتعل مظاہرین بلوچ ہوٹل کے سامنے نکل آئے، ٹائر نذرآتش کرکے ٹریفک کو معطل کر دیا
گھنٹوں بجلی نہ ہونے پر رات گزارنا محال، دن میں3،3 گھنٹے بندش سے پانی کی قلت ہو گئی، مظاہرین
کراچی (کرائم رپورٹر ) لیاقت آباد وملحقہ آبادیوں کے مکینوں نے کے الیکٹرک کی طویل لوڈشیڈنگ کے خلاف بلوچ ہوٹل کے سامنے مین شاہراہ پر احتجاجی مظاہرہ کیا۔ مظاہرین نے سٹرک پر رکاوٹیں کھڑی کرکے سٹرک کو عام ٹریفک کے لیے بند کردیا ۔کچھ مشتعل مظاہرین نے شاہر اہ پر پرانے ٹائر وں کو بھی نذر آتش کردیا،۔تفصیلات کے مطابق منگل کی صبح بلوچ ہوٹل اور اطراف کی آبادیوں کے مکینوں کی بڑی تعداد مشتعل ہوگئی اور حسن اسکوائر سے غریب آباد آنے والے روڈ پر جمع ہوکر کے الیکٹرک کے خلاف شدید نعرے بازی کی اور سٹرک پر مختلف قسم کا سامان رکھ کرشاہراہ عام ٹریفک کے لئے بند کردی جبکہ بعض مشتعل مظاہرین نے شاہراہ پر پرانے ٹائروں میں آگ لگادی،جس کے نتیجے میں گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی ، جس کے باعث مختلف علاقوں سے آنے والی گاڑیوں کے مالکان کوذہنی اذیت کا سامنا کرنا پڑا،اس حوالے علاقہ مکینوں کا کہنا تھا کہ کئی گھنٹوں سے بجلی کی فراہمی بند ہونے کی وجہ سے گھروں میں رات گزارنا دشوار ہوگیا ہے، پانی سے بھی علاقہ مکین محروم ہوجاتے ہیں ، انہوں نے احتجاج کرتے ہوئے بتایا کہ ہمارے علاقے کو بھی شہر کے مختلف علاقوں کی طرح بجلی فراہم کی جائے‘ پولیس کی یقین دہانی پر مظاہرین منتشر ہوگئے۔

Tags: