آلودگی پھیلانے والی کراچی کی200 صنعتوں کو نوٹس جاری

October 21, 2015 4:31 pm0 commentsViews: 33

کسی بھی فرد یا ادارے کو ایسے آبی، فضائی یا ٹھوس مادے کے اخراج کی اجازت نہیں جس میں مقررہ حد سے زیادہ آلودگی پھیلانے والے عناصر ہوں
خلاف ورزی کرنے کی صورت میں جرمانہ یا قید کی سزا ہو سکتی ہے، احکامات نظر انداز کرنے پر صنعت کو بند بھی کیا جا سکتا ہے
کراچی( کامرس رپورٹر) ادارہ تحفظ ماحولیات حکومت سندھ (ای پی اے سندھ) نے صنعتی آلودگی کی روک تھام کیلئے اقدامات میں تیزی لاتے ہوئے منگل کے روز کراچی کے مختلف صنعتی علاقوں میں قائم حد سے زیادہ آبی آلودگی پھیلانے والی دو سو صنعتوں کونوٹس جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ وہ اپنی فیکٹری میں جلد از جلد ٹریٹمنٹ پلانٹ کی تنصیب یقینی بنانے کیلئے فی الفور عملی اقدامات اٹھائیں اور اس ضمن میں پیش قدمی کی نگرانی کیلئے ادارے کی ٹیمیں پندرہ یوم کے اندر اندر مذکورہ فیکٹریوں کا دورہ کریں گی اور ان کے آبی اخراج کے نمونے بھی حاصل کریں گی تاکہ مقررہ حدود سے زائد آلودگی کے عناصر کی موجودگی کی صورت میں ذمہ دار صنعتوں کے خلاف سندھ کے تحفظ ماحول کے قانون 2014 ء کے تحت قانونی کارروائی بھی کی جاسکے۔ ای پی اے سندھ کے ڈائریکٹر وقار حسین پھلپوٹو اور ڈاکٹر عاشق علی لانگھا کے دستخطوں سے نکلنے والے نوٹسز میں آلودگی پھیلانے والی مذکورہ دو سو صنعتوں کو سندھ کے قانون برائے تحفظ ماحول 2014 کی مختلف دفعات کا حوالہ دیتے ہوئے واضح کیا ہے کہ کسی بھی فرد یا ادارے کو کسی بھی ایسے آبی فضائی یا ٹھوس اخراج کی ہرگز اجازت نہیں جس میں آلودگی پھیلانے والے مختلف عناصر کی تعداد سندھ کے ماحولیاتی معیارات سے متجاوز ہو‘ اور ایسا کرنیکی صورت میں ای پی اے سندھ مذکورہ قانون کے تحت ایسی صنعت کو جرمانے یا قید اور احکامات یکسر نظر انداز کرنے کی صورت میں بند بھی کرسکتی ہے۔ آلودگی پھیلانے والی مذکورہ صنعتوں میں سے زیادہ تر کورنگی انڈسٹریل ایریا‘ سائٹ انڈسٹریل ایریا اور دیگر صنعتی علاقوںمیں واقع ہیں اور ان میں سے کثیر تعداد ٹیکسٹائل‘فارما‘ فوڈ ‘کیمیکل اور متفرق سیکٹرز سے وابستہ ہیں۔

Tags: