اندرون سندھ بلدیاتی الیکشن 700 امیدوار بلامقابلہ کامیاب؟ پیپلزپارٹی کا دعویٰ

October 26, 2015 4:46 pm0 commentsViews: 23

حساس اداروں نے بلدیاتی الیکشن کے موقع پر دہشت گردی کے خدشات ظاہر کردیے، جیکب آباد،کشمور، شکار پور اور شہداد کوٹ انتہائی حساس قرار
پیپلزپارٹی کے ذرائع کا دعویٰ ہے کہ سندھ میں آٹھ اضلاع کی 2300 یونین کونسلوں میں ان کے امیدوار بلامقابلہ کامیاب ہوئے ہیں، سرکاری ذرائع سے تصدیق نہیں ہوسکی، حیدرآباد میں متحدہ کے امیدواروںکے بلامقابلہ کامیاب ہونے کا دعویٰ کیاجارہا ہے
حساس اداروں نے آٹھ اضلاع میں 750 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی حساس اور 1700 پولنگ اسٹیشنوں کو حساس قرار دیا ہے، بینظیر آباد اور حیدرآباد سے پولیس کی اضافی نفری طلب کی جارہی ہے، سیکورٹی میں اضافہ کیاجائے گا
کراچی( نیوز ایجنسیاں) سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں30 اکتوبر کو پولنگ ہوگی اس حوالے سے سرگرمیاں تیز ہوگئی ہیں جبکہ الیکشن کمیشن نے بھی تیاریاں مکمل کرنا شروع کردی ہیں‘ اندرون سندھ پیپلز پارٹی اور ایم کیو ایم میں مقابلے کا امکان ہے‘ دونوں جماعتوں کی جانب سے دعوے کئے جارہے ہیں۔ پیپلز پارٹی نے دعویٰ کیا ہے کہ غیر سرکاری نتائج کے مطابق اندرون سندھ میں بلدیاتی الیکون کی کمپئن میں8 اضلاع کی2300 یوسیز میں ان کے700 یوسیز امید وار بلا مقابلہ کامیاب ہوچکے ہیں ان کا یہ دعویٰ فیس بک پر بھی موجود ہے تاہم خبروں کی حد تک دعویٰ کیا جارہا ہے‘ ابھی تک اس کی مصدقہ تفصیل سامنے نہیں آسکی۔ جبکہ حیدر آباد میں محدہ کے امید وار بھی بلا مقابلہ کامیاب ہوگئے ہیں‘ سندھ میں ہونیوالے بلدیاتی انتخابات کے موقع پر حساس اداروں نے دہشت گردی کے خدشات بھی ظاہر کئے ہیں‘ حساس اداروں نے محکمہ داخلہ سندھ اور پولیس کو پہلے مرحلے میں سندھ کے8اضلاع میں ہونیوالے بلدیاتی انتخابات کے موقع پر پولیس کی اضافی نفری تعینات کرکے سیکورٹی پلان کو مزید موثر بنا نے کی سفارش کی ہے‘ ذرائع نے بتایا کہ اس سلسلے میں صوبائی محکمہ داخلہ اور سندھ پولیس نے سیکورٹی پلان پر نظر ثانی کرکے ہنگامی اقدامات شروع کردیئے ہیں‘ ذرائع نے بتایا کہ بینظیر آباد اور حیدر آباد ڈویژن اضلاع سے پولیس کی اضافی نفری طلب کرنے پر غور کیا جارہا ہے‘ وقت کم ہونے کے باعث اس ضمن میں آج اہم فیصلے متوقع ہیں‘ ذرائع نے بتایا کہ جیکب آباد‘ کشمور‘ شکار پور اور ضلع قمبر‘ شہداد کوٹ کو بھی انتہائی حساس جبکہ لاڑکانہ‘ سکھر ‘گھوٹکی اور خیرپور کو حساس قرار دیا گیا ہے‘ ذرائع نے بتایا کہ اس سے قبل مذکورہ8 اضلاع میں750 پولنگ اسٹیشنز کو انتہائی اور 1700 پولنگ اسٹیشنز کو حساس قرار دیا گیا تھا‘ پہلے ترتیب دیئے گئے سیکورٹی پلان کے تحت31 ہزار پولیس اہلکاروں کو تعینات کیا جانا تھا‘ لیکن اب انتہائی حساس اور حساس پولنگ اسٹیشنوں کی تعداد بڑھ جانے کے باعث پولیس کی اضافی نفری کی ضرورت ہوگی‘ اس کے علاوہ اہم اور عوامی مقامات اور متعلقہ علاقوں کے داخلی و خارجی راستوں کی سیکورٹی میں بھی اضافہ کیاجائیگا۔

Tags: