ہولناک زلزلہ ہر طرف چیخ و پکار‘ عمارتیں کاغذ کی طرح ہلنے لگیں ۔ ملک میں ناگہانی آفت کی مزید خبریں

October 27, 2015 1:54 pm0 commentsViews: 71

اچانک جھٹکے شروع ہوئے جو بڑھتے چلے گئے‘ پرندے شور مچانے لگے‘ پائوں کے نیچے زمین مسلسل ہل رہی تھی
شدید زلزلے نے دنیا کو ہلا دیا‘ ہر آدمی خوفزدہ تھا‘ زلزلے کے بعد کافی دیر تک سر چکرا رہاتھا‘ مختلف افراد کے تاثرات
پشاور( یو پی پی) پاکستان کے زلزلے پیما مرکز کا کہنا ہے کہ زلزلہ پاکستانی وقت کے مطابق دو بج کر9 منٹ پر آیا۔ زلزلے کی شدت ریکٹر اسکیل پر 8.1 ریکارڈ کی گئی ہے۔ عینی شاہدین نے اپنے تاثرات میں بتایا کہ سب سے طویل اور ہولناک زلزلہ تھا عمارتیں کاغذ کی طرح ہلنے لگیں۔ ایبٹ آباد سے محمد خان نے ای میل میں لکھا کہ اچانک جھٹکے شروع ہوئے اور بڑھتے گئے۔ دور دور تک پرندوں نے شور مچانا شروع کر دیا ہم لوگ سڑک پر تھے ارد گرد تمام کاریں رک گئیں اور دکانوں و دفاتر سے افراد باہر نکل آئے۔ ہر طرف چیخ و پکار تھی، ارد گرد کی عماتیں گتے کے ڈبوں کی طرح ہل رہی تھیں۔ میں نے کئی عمارتوں کی کھڑکیوں اور چھتوں سے اینٹیں اور ٹائلیں گرتی دیکھیں۔ پشاور کے نوید احمد خان نے بتایا کہ پائوں کے نیچے زمین مسلسل ہل رہی تھی اور میرے ارد گر د کوئی ایسی چیز نہیں تھی جسے میں تھام سکتا۔ صحافی زبیر خان نے سوات ویلی سے ٹیلی فون پر رائٹرز کو بتایا کہ جب گاڑی سے اترا تو گاڑی بھی زلزلے کے جھٹکوں سے ہچکولے کھا رہی تھی۔ اپر دیر ضلع کے واڑی رورل ہیلتھ سینٹر ڈسٹرکٹ سے وسیم حیدر نے فون کرکے بتایا کہ ہیلتھ سینٹر میں درجنوں زخمی لائے گئے ہیں جن میں سے2 جاں بحق ہوگئے۔ چترال پولیس اہلکار شاہ جہاں نے بتایا کہ علاقے میں ٹیلی فون کے کھمبے گر گئے ہیں ڈومینک مینارڈ نے ٹوئٹ کیا کہ امید ہے کہ اس زلزلے نے دنیا کو اتنا ہلایا ہوگا کہ لوگ سمجھ سکیں کہ انہیں ایک دوسرے کی ضرورت ہے۔ سید علی عباس نے ٹوئٹ کیا کہ ایف الیون کے صغریٰ ٹاور میں واقع دفتر میں دراڑیں نظر آئیں۔ بی بی سی پر میانوالی سے محمد رفیق نے کہا کہ میری زندگی میں اتنا طویل زلزلہ نہیں آیا۔ زمین رکنے کا نام نہیں لے رہی تھی۔ ہر آدمی خوفزدہ تھا۔ اسلام آباد سے عبدالعلیم نے بی بی سی کو بتایا کہ میں اسلام آباد میں پیٹرول پمپ پر موٹر سائیکل میں پیٹرول ڈلوانے کیلئے رکا تھا۔ جب ہر طرف سے چیزیں ہلنا شروع ہوگئیں حتیٰ کہ مجھے محسوس ہوا جیسے کوئی موٹر سائیکل کو دھکا لگا رہا ہو، لیہ سے انجم فاروق نے بتایا کہ زلزلے کے بعد کافی دیر تک سر چکراتا رہا۔ گوجرانوالہ کے ابراہیم شفقت کے مطابق ایک منٹ سے زائد تک زلزلہ جاری رہا۔

7 دن میں دنیا بھر میں709 زلزلے
ریکارڈ کیے، امریکی محکمہ ارضیات
ملتان(اے پی پی) امریکی محکمہ ارضیات کے مطابق دوپہر تک دنیا بھر میں چھوٹے بڑے85 زلزلے ریکارڈ کئے گئے، رپورٹ کے مطابق یہ محکمہ تسلسل کے ساتھ ارضیاتی تبدیلیوں پر نظر رکھتا ہے، اور زلزلوں کا ریکارڈ جمع کرتا ہے، رپورٹ میں تبایا گیا ہے کہ دنیا بھر میں گزشتہ 7 دن کے دوران709 گزشتہ ایک ماہ کے دوران3350 اور گزشتہ ایک سال کے دران 39102 زلزلے ریکارڈ کیے گئے۔

زلزلے کی زیادہ گہرائی کے
سبب کم نقصان ہوا
اسلام آباد(نیوزڈیسک)حالیہ زلزلے کی بہت زیادہ گہرائی کم نقصان کی بنیادی اور واحد وجہ ہے۔ جبکہ اکتوبر2005 کے ہولناک زلزلے کا زمین کے اندر فاصلہ کم تھا۔ پاکستان میٹرولوجیکل ڈپارٹمنٹ کے سابق ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر قمر زمان چوہدری نے بتایا کہ زلزلے کی گہرائی جتنی زیادہ ہوگی جانی و مالی نقصانات اتنے کم اور گہرائی جتنی کم ہوگی نقصانات اتنے زیادہ ہوں گے۔

ایوان صدر اور وزیراعظم ہائوس بھی خطرناک فالٹ لائن پر ہیں
پاکستان کے7 زونز ایسے ہیں جہاں شدید زلزلے آنے کا خدشہ موجود ہے، نیسپاک
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) نیسپاک نے کہا ہے کہ ایوان صدر اور وزیراعظم ہائوس بھی انتہائی خطرناک فالٹ لائن پر ہیں‘ پاکستان کا 2تہائی رقبہ کسی نہ کسی فالٹ لائن پر واقع ہے‘ ملک کا 45 فیصد علاقہ یوریشین اور 40 فیصد انڈین ٹیکٹونک پلیٹ پر ہے۔ نجی ٹی وی پر نشر ہونیوالی خبر کے مطابق نیشنل انجینئرنگ سروسز پرائیویٹ لمیٹڈ کے ماہرین ارضیات نے ہے کہ فالٹ لائنز کے حساب سے پاکستان کو 19 زون میں تقسیم کیا گیا ہے‘7زونز ایسے ہیں جہاں شدید زلزلوں کا خدشہ ہے‘ سندھ میں گھوٹی‘سکھر اور نواب شاہ‘ پنجاب میں چولستان‘ بہاولپور‘ خیبر پختونخوا میں جنوبی و شمالی وزیرستان فالٹ لائنز پر واقع ہیں جبکہ بلوچستان میں ڈیرہ بگٹی اور آزاد کشمیر کا سارا علاقہ زلزلے کی فالٹ لائنز پر ہے‘ نیسپاک کے ذرائع کا کہنا ہے کہ کراچی سے لے کر آواران تک ساحلی پٹی خطرناک ترین لائنوں پر ہیں۔

پاکستان میں شدید زلزلے سے پڑوسی ممالک بھی لرز اٹھے
پڑوسی ملک افغانستان میں تباہی مچ گئی، 12 طالبات سمیت120سے زائد افراد لقمہ اجل بن گئے
جھٹکے دبئی میں بھی محسوس کیے گئے، بھارت میں کئی افراد زخمی ہوگئے، خوفزدہ لوگوں نے دوڑیں لگادیں
دہلی، کابل( مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں آنے والے شدید زلزلے سے پڑوسی ملک میں بھی تباہی پھیلی، افغانستان میں12 طالبات سمیت120 افراد زندگی کی بازی ہار گئے۔ پورے ملک میں آنے والے زلزلے کے جھٹکے پڑوسی ممالک کے مختلف شہروں میں بھی محسوس کئے گئے اور وہاں بھی لوگ خوف و ہراس کا شکار ہو کر گھروں اور دفاتر سے باہر نکل آئے۔ افغانستان میں مکان اور دکانوں کی چھتیں گرنے سے120 سے زائد افراد زندگی کی بازی ہار گئے اور اس کے علاوہ سینکڑوں افراد شدید زخمی بھی ہوئے۔ جنہیں طبی امداد کیلئے اسپتالوں میں داخل کرا دیا گیا ہے۔ زلزلے کے جھٹکے محسوس ہونے کے بعد لوگوں میں خوف و ہراس پھیل گیا اور لوگ خوفزدہ ہو کر گھروں اور دفاتر سے باہر بھاگ کھڑے ہوئے۔ دبئی میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے پڑوسی ملک بھارت میں بھی زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے جہاں کئی افراد کے زخمی ہونے کی اطلاعات موصول ہوئی ہیں جنہیں مقامی اسپتالوں میں داخل کرا دیا گیا ہے دوسری جانب بھارت میں ہلاکتوں کی کوئی اطلاع نہیں ملی۔ حکام کے مطابق زلزلے کے شدید جھٹکوں کے نتیجے میں تلو کان شہر میں اسکول میں بھگدڑ مچنے سے12 طالبات جاں بحق ہوگئیں۔ جب کہ مشرقی شہر جلال آباد میں 50سے زائد افراد جاں بحق اور56 زخمی ہوئے، حکام کا کہنا ہے کہ ملک کے مشرقی حصوں میں زلزلے سے متاثرہ علاقوں میں امدادی کاموں کا آغاز کر دیا گیا ہے جب کہ ہلاکتوں میں اضافے کا خدشہ ہے۔

کراچی میں زلزلہ نہیں آیا،محکمہ موسمیات
زلزلے کا مرکز کوہ ہندوکش تھا، جھٹکے دیگر شہروں میں محسوس کیے گئے، یہاں زلزلہ ریکارڈ نہیں ہوا
زلزے کی شدت 8.1 تھی اور اس کی گہرائی 193 کلو میٹر تھی، 19کلومیٹر گہرائی پر بہت زیادہ نقصان ہوتا، عبدالرشید
کراچی( مانیٹرنگ ڈیسک) محکمہ موسمیات کے ڈائریکٹر عبدالرشید نے کہا ہے کہ کراچی میں زلزلہ نہیں آیا‘ زلزلے کا مرکز ہندو کش تھا‘ ڈائریکٹر محکمہ موسمیات عبدالرشید نے کہا کہ زلزلے کا مرکز کوہ ہندو کش تھا اور اس کے جھٹکے دیگر شہروں میں بھی محسوس کئے گئے تاہم کراچی میں زلزلہ نہیں آیا اور نہ ہی کوئی نقصان ہوا ہے چند افراد کے مطابق زلزلے کے جھٹکے محسوس کئے گئے تھے لیکن محکمہ موسمیات کے پاس کراچی میں زلزلے کا کوئی ریکارڈ نہیں ہے‘ انہوں نے کہا کہ کوہ ہندوکوش میں زلزلہ 8.1 شدت کا تھا اور اس کی گہرائی193 کلو میٹر تھی۔

Tags: