خوفناک زلزلہ،ہلاکتیں تین سو سے بڑھ گئیں،تعداد میں اضافے کا خدشہ

October 27, 2015 1:56 pm0 commentsViews: 34

سب سے زیادہ نقصان خیبرپختونخوا میں ہوا جہاں بڑی تعداد میں مکانات منہدم ہونے سے ہلاکتیں ہوئیں، مالاکنڈ میں 137افراد جاں بحق ہوئے،تورغر میں 40گھروں پر مشتمل گائوں صفحہ ہستی سے مٹ گیا
چارسدہ، سوات، چترال، مردان، ہزارہ،بونیر، کرم ایجنسی، مہمند ایجنسی، اپردیر، شانگلہ اور اطراف کے علاقوں میں سینکڑوں مکانات ملیہ میٹ ہوگئے
اسلام آباد( مانیٹرنگ ڈیسک) خیبر پختونخوا سمیت ملک بھر کے دیگر علاقوں میں آنے والے خوفناک زلزلے سے ہلاکتوں کی تعداد تین سو سے بڑھ گئی ہے جبکہ ہلاکتوں میں مزید اضافے کا اندیشہ ہے۔ کیونکہ دو دراز علاقوں سے تاحال ہلاکتوں کی خبریں پہنچ رہی ہیں رات گئے ملنے والی اطلاعات کے مطابق اب تک تین سو افراد جاں بحق ہو چکے ہیں۔ پاکستان میں گزشتہ روز آنے والے شدید زلزلے نے ایک مرتبہ پھر قیادت ڈھا دی،۔ 8 اعشاریہ 1 شدت کے زلزلے سے زیادہ نقصان خیبر پختونخوا میں ہوا، جہاں بڑی تعداد میں مکانات منہدم ہوگئے۔ جب کہ 300 افراد لقمہ اجل بنے اور2 ہزار سے زائد زخمی ہوئے۔ مالا کنڈ میں 137 افراد لقمہ اجل بنے تو رغر میں40 گھروں پر مشتمل گائوں نصرت خیل مکمل تباہ ہوگیا۔ پنجاب، گلگت بلتستان اور آزاد کشمیر میں بھی جانی نقصان ہوا، رابطہ سڑکیں تباہ ہوگئیں۔ جب کہ تودے گرنے سے شاہراہ قرا قرم جگہ جگہ سے بند ہوگئی۔ پاکستانی زلزلہ پیما مرکز کے مطابق ریکٹر اسکیل پر اس کی شدت8 اعشاریہ 1 ریکارڈ کی گئی جبکہ اس کا مرکز افغانستان میں کوہ ہندو کش ریجن میں193 کلو میٹر گہرائی میں تھا۔ امریکی زلزلہ پیما مرکز کے مطابق زلزلے کی شدت 7 اعشاریہ 5 ریکارڈ کی گئی۔ رات گئے مختلف علاقوں سے ملنے والی اطلاعات کے مطابق300 کے قریب افراد جاں بحق اور2 ہزار سے زائد زخمی ہوئے تاہم یہ خدشہ بھی ظاہر کیا جا رہا ہے کہ اموات کی تعداد زیادہ ہو سکتی ہے اطلاعات کے مطابق پشاور میں6 افراد جاں بحق اور165 زخمی، نوشہرہ میں2 جاں بحق اور 7 زخمی ، کوہاٹ میں14 زخمی، چار سدہ میں4 جاں بحق اور24 زخمی، سوات میں18 جاں بحق اور 307 زخُمی، شانگلہ میں 25 جاں بحق اور102 زخمی، مالا کنڈ میں 137 جاں بحق اور 596 زخمی، صوابی میں4جاں بحق اور74 زخمی، چترال میں 37 جاں بحق اور87 زخمی، مردان میں2 جاں بحق اور137 زخمی ، ہزارہ ڈویژن میں 19 جاں بحق اور150زخمی، بونیر میں12 جاں بحق اور87 زخمی، ہنگو میں8 جاں بحق اور32 زخمی، کرم ایجنسی میں2 جاں بحق اور2 زخمی، باجوڑ ایجنسی میں 25 جاں بحق اور100 زخمی، مہمند ایجنسی میں5 جاں بحق اور8 زخمی اورکزئی ایجنسی میں4 زخمی ہوئے۔ اطلاعات کے مطابق اپر دیر کے علاقے ریحان کوٹ، شرینگل، سندری میں سیکڑوں مکانات ملیا میٹ ہوگئے۔ شانگلہ کے علاقے چکیسر، پورن، بشام، بیلہ، ضلع کوہستان، سوات، چار سدہ اور باجوڑ ایجنسی میں بھی وسیع پیمانے پر تباہی ہوئی۔ چترال سے موصولہ اطلاعات کے مطابق مومن کلے جانے والی سڑک مکمل طور پر تباہ ہوگئی ہے۔ لوئر دیر کے علاقوں میدان، ثمر باغ، بن شاہی اور دیگر علاقوں میں تباہی ہوئی۔ مانسہرہ، کوہستان، تور غر اور ایبٹ آباد میں متعدد مکانات زمین بوس ہونے اور متعدد مکانات کی چھتیں اور دیواریں بھی گرنے کی اطلاعات ہیں۔ تورغر کے اسسٹنٹ کمشنر کے مطابق70 سے زائد مکانات منہدم ہو چکے ہیں۔ تورغر کے ایک گائوں نصرت خیل جہاں پر اندازے کے مطابق 40 گھر واقع تھے مکمل طور پر تباہ ہو چکا ہے۔ اور انتظامیہ کے مطابق اب تک صرف15 لاشیں ہی نکالی جا سکی ہیں۔ بٹگرام اور کونش ویلی میں بھی بڑی تعداد میں مکانات منہدم ہونے کی اطلاعات ہیں۔ ہری پور میں مکانات اور دکانیں گرنے کی اطلاعات ہیں۔ ہری پور کے نواحی علاقے موضع آلولی مین ملک اختر نامی شخص کے بھینسوں کے باڑے کی چھت گر گئی اور جانور ملبے تلے تب گئے۔ ہری پور شہر میں مختلف پلازوں اور مکانوں کی دیواروں میں خطرناک دراڑیں پڑ چکی ہیں۔ سنجیالیہ گائوں میں حجرہ کی عمادت منہدم ہوگئی۔ پشاور سے آمدہ اطلاعات کے مطابق تاریخی مسجد مہابت خان اور قلعہ بالا حصار کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ سینٹرل جیل پشاور اور ڈسٹرکٹ جیل مانسہرہ کی عمارات کو بھی نقصان پہنچنے کی اطلاعات ہیں۔

Tags: