پاکستان کے اوسط درجہ ٔ حرارت میں خطرناک اضافہ

October 28, 2015 1:47 pm0 commentsViews: 25

موسمیاتی تبدیلی انتہائی خطرناک ہے، زلزلے مزید تباہی پھیلاسکتے ہیں، پاکستان فعال اور متحرک زلزلہ زون میں واقع ہے، امریکی جیولوجیکل سروے
درجہ حرارت میں اضافے کے باعث مستقبل میں شدید گرمی یا سردی پڑنے کا خدشہ ہے، زلزلے، سیلاب اور سمندری طوفان کے خطرات بھی موجود ہیں جو گرمی بڑھنے کی وجہ سے آسکتے ہیں
خوراک،توانائی اور پانی کا شدید بحران بھی پیدا ہوسکتا ہے، موسمیاتی تبدیلی کے منفی اثرات کے نتیجے میں پاکستان کو سالانہ331ارب روپے کا نقصان ہورہا ہے، رپورٹ
کراچی( نیوز ایجنسیاں) پاکستان میں موسمیاتی تبدیلیوں سے مستقبل میں مزید خطرات کا اندیشہ ہے‘ زلزلے ‘سیلاب اور سمندری طوفان بھی آسکتے ہیں‘ پاکستان کے اوسط درجہ حرارت میں گزشتہ60 سال کے دوران خطرناک حد تک اضافہ ہوا ہے‘ ماہرین ماحولیات کے مطابق درجہ حرارت میں اضافے کے باعث مستقبل میں شدید گرمی یا سردی پڑنے کا خدشہ ہے‘ موسمیاتی تبدیلیوں کے منفی اثرات دنیا بھر میں ظاہر ہونا شروع ہوگئے ہیں۔ پاکستان ان تبدیلیوں کی وجہ سے ماہ جون میں2ہزار قیمتی جانوں سے محروم ہوچکا ہے۔ گلوبل وارمنگ میں اضافے کے باعث عالمی سطح پر اوسط درجہ حرارت میں اضافہ ہورہا ہے‘ جو پاکستان میں سیلابوں‘ زلزلوں‘ زمینی و سمندری طوفان اور شدید گرمی یا شدید سردی کاسبب بنے گا‘ اس سے خوراک‘ توانائی اور پانی کا شدید بحران پیدا ہوسکتاہے‘ موسمیاتی تبدیلی کے منفی اثرات کے نتیجے میں پاکستان کو ماحولیات اور قدرتی وسائل کے شعبے میںسالانہ331 ارب روپے کا نقصان ہورہا ہے‘ محکمہ موسمیات کے مطابق گزشتہ 100 سال کے دوران دنیا کے اوسط درجہ حرارت میں0.6 ڈگری سینٹی گریڈ کا اضافہ ہوا ہے اور اگر یہی سلسلہ جاری رہا تو رواں صدی کے دوران ٹمپریچر کی اوسط شرح1.8 سے 4 ڈگری سینٹی گریڈ تک بڑھ سکتی ہے۔ دوسری طرف امریکی جیوجیکل سروے نے کہا ہے کہ پاکستان فعال اور متحرک زلزلہ زون میں واقع ہے‘اور پیر کو آنیوالا زلزلہ ہندو کش سلسلے سے2010 کلو میٹر کی گہرائی میں آیا اور اس کی وجہ پلیٹوں کی الٹی فالٹنگ تھی۔ زلزلے اور اس کے اثرات پر اپنی رپورٹ میں امریکی جیولوجیکل سروے نے کہا کہ فالٹنگ کی وجہ سے یہ ارتعاش آیا‘ زلزلے کی بلند سطح پر جنوبی ایشیاء شمال کی جانب حرکت کرتاہے اور یوریشیا پلیٹ کے ساتھ37 ملی میٹر فی سال کی رفتار سے ٹکراتا ہے‘پاکستان‘ افغانستان اور بھارت کے علاقوں میں آنیوالا زلزلہ جنوبی ایشیائی اور یوریشیائی پلیٹوN کی وجہ سے آتا ہے‘ یہ تصادم بڑے بڑے پہاڑی سلسلے بھی پیدا کرتا ہے جس میں ہمالیہ‘ قراقرم پامیر اور ہندوکش کے سلسلے شامل ہیں۔

Tags: