بلدیاتی الیکشن ہائی جیک ہونے کا خدشہ منصوبہ بندی کر لی گئی، فاروق ستار

October 30, 2015 2:21 pm0 commentsViews: 23

سندھ میں صوبائی حکومت نے انتخابی عملے کے آغاز سے ہی مداخلت شروع کردی تھی، سرکاری مشینری کا بے دریغ استعمال کیاجارہا ہے، متحدہ قومی موومنٹ
امیدواروں کو دھمکیاں مل رہی ہیں، عدالتی حکم پر بلدیاتی الیکشن میں حصہ لینے والے امیدواروں کے فارم بحال کیے گئے ہیں، الیکشن میں صرف ایک دو روز باقی ہیں امیدوار انتخابی مہم کیسے چلاسکتے ہیں، رہنما ایم کیو ایم
جن علاقوں کے امیدواروں کے فارم تاخیر سے بحال ہوئے ہیں وہاں پر الیکشن ملتوی کیے جائیں اور سندھ حکومت کی انتخابی امور میں مداخلت بند کرائی جائے، سکھر میں بات چیت
حق پرست عوام باشعور ہیں، تحریک انصاف میر جعفر اور میرصادق کا گروپ ہے، بلدیاتی الیکشن میں بیمار ذہنوں پر مشتمل تحریک انصاف کے سیاہ کرتوتوں کا جمہوری انداز میں جواب دیں گے، گلفراز خان
سکھر( مانیٹرنگ ڈیسک) متحدہ قومی موومنٹ نے بلدیاتی انتخابات کو ہائی جیک کرنے کے خدشے کا اظہار کر دیا۔ متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن اور سابق وفاقی وزیر ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا ہے کہ انتخابی عمل کے آغاز سے ہی صوبائی حکومت نے مداخلت شروع کر دی تھی۔ بلدیاتی الیکشن کو ہائی جیک کرنے کی منصوبہ بندی کر لی گئی ہے سرکاری مشینری کا بے دریغ استعمال کیا جا رہا ہے امیدواروں کو دھمکیاں مل رہی ہیں بعض حلقوں میں ہمارے امیدواروں کو فارم جمع کرانے میں رکاوٹیں ڈالی گئیں اور انہیں کاغذات جمع نہیں کرانے دئیے گئے ان خیالات کا اظہار انہوں نے سکھر میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کیا، ڈاکٹر فاروق ستار نے کہا کہ عدالتی حکم پر کئی امیداروں کے فارم بحال کئے گئے ہیں مگر الیکشن میں اب صرف ایک اور روز باقی رہ گیا ہے۔ امیدوار الیکشن مہم کیسے چلا سکتے ہیں۔ لہٰذا جن علاقوں کے امیدواروں کے فارم تاخیر سے بحال ہوئے ہیں وہاں پر الیکشن ملتوی کئے جائیں اور بلدیاتی امور میں سندھ حکومت کی مداخلت بند کرائیں ورنہ شفاف الیکشن کا انعقاد ممکن نہیں ہو سکے گا دوسری طرف کراچی میں بھی انتخابی سرگرمیاں زور پکڑ گئی ہیں کراچی کے ڈسٹرکٹ سینٹرل میں مختلف سیاسی جماعتوں کے درمیان مقابلہ ہوگا لیکن ایم کیو ایم کی پوزیشن بہت زیادہ مستحکم ہے۔ ضلع سینٹرل میں یونین کونسلوں کی تعداد52 ہے جہاں سب سے زیادہ امیدوار ایم کیو ایم نے کھڑے کئے ہیں پیپلز پارٹی نے75 فیصد یونین کونسلوں میں امیدوار کھڑے کئے ہیں تحریک انصاف نے جماعت اسلامی کے ساتھ مل کر سیٹ ایڈجسٹمنٹ کی ہے، کراچی سینٹرل کے دیہات میں پیپلزپارٹی ، پی ٹی آئی، مسلم لیگ اور جماعت اسلامی سرگرم ہیں۔
دوسرا انٹرو
کراچی( اسٹاف رپورٹر) متحدہ قومی موومنٹ کی رابطہ کمیٹی کے رکن گلزار خان خٹک نے کہا ہے کہ تحریک انصاف میر جعفر و میر صادق کی عکاس ہے اور یہ جماعت میر جعفر و میر صادق کا روپ ہے۔ پاکستان بھر کے حق پرست عوام با شعور ہیں اور انشاء اللہ آئندہ بلدیاتی انتخابات میں بھی تحریک انصاف کے سیاہ کرتوتوں کا جمہوری انداز میں جواب دیں گے۔ ایم کیو ایم کے حوالے سے عمران خان اور تحریک انصاف کے دیگر رہنمائوں کے بیانات پر تبصرہ کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ کسی بھی جماعت کے لئے ایم کیو ایم جیسی عوامی تحریک سے موازنہ کرنا اس جماعت کیلئے قابل فخر با ت ہے ایک بیان میں گلفراز خان خٹک نے کہا کہ ایم کیو ایم لاکھوں کروڑوں عوام کی منتخب جماعت ہے۔ جسے عوام نے بار بار مینڈیٹ دیکر اپنی نمائندگی کا حق دیا ہے۔ گلفراز خان خٹک نے کہا کہ عمران خان اور پی ٹی آئی کے دیگر رہنما انتخابات میں جس جماعت سے عبرتناک شکست کھاتے ہیں اس کی برائیاں کرنے لگ جاتے ہیں۔ یہی وجہ ہے کہ وہ این اے 246 میں ایم کیو ایم اور این اے 144 کے ضمنی انتخاب میں مسلم لیگ ن سے شکست کھانے کے بعدایم کیو ایم اور مسلم لیگ ن کے خلاف بیانات دے رہے ہیں۔

Tags: