گلستان جوہر،جھگیوں میں پراسرار آتشزدگی، 5افراد ہلاک،6زخمی

October 30, 2015 3:05 pm0 commentsViews: 25

نعمانیہ مسجد کے قریب پلاٹ پر قائم 2جھگیوں میں اچانک آگ لگ گئی جس نے دیگر جھگیوں کو بھی اپنی لپیٹ میں لے لیا
بلاک7اور8 میں قائم جھگیوں میں بھی آتشزدگی سے 3افراد جھلس گئے، وزیرداخلہ سندھ نے رپورٹ طلب کرلی
کراچی( کرائم رپورٹر) گلستان جوہر کے تین مقامات پر جھگیوں میں پر اسرار طور پر آگ گئی جس کے نتیجے میں ضعیف العمر خاتون اور بچے سمیت 5افراد جاں بحق اور6 زخمی ہوگئے۔ آتشزدگی کے باعث50سے زائد جھگیاں ان میں موجود سامان جل کر خاکستر ہوگیا۔ تفصیلات کے مطابق گلستان جوہر کے علاقے بلاک2 نعمانیہ مسجد نزد صادقین گرامر اسکول سے متصل پلاٹ نمبرA-83 پر قائم درجن سے زائد جھگیوں میں جمعرات کے روز سے پہر تقریباً4 بجے کے قریب اچانک آگ بھڑک اٹھی اور دیکھتے ہی دیکھتے 2 جھگیوں میں لگنے والی آگ نے مزید جھگیوں کو بھی لپیٹ میں لے لیا جھگیوں میں رہائش پذیر افراد میں افرا تفری پھیل گئی۔ 20 منٹ بعد فائر بریگیڈ کی3 گاڑیاں موقع پر پہنچ گئیں۔ فائر فائٹر وں نے نصف گھنٹے کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پالیا۔ ڈی ایس پی گلستان جوہر خالد ٹیپو نے بتایا کہ آگ لگنے کے نتیجے میں معمر خاتون اور بچوں سمیت 5 افراد جاں بحق ہوگئے۔ جبکہ3 افراد معمولی طور پر جھلس گئے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ ابتدائی معلومات پر معلوم ہوا ہے کہ آگ غفار نامی شخص کی جھگی میں کھانا پکانے کے دوران گیس سلنڈر پھٹنے کے باعث لگی۔ جاں بحق ہونے والوں کی شناخت 80 سالہ شاہدہ عرف صاحبو بی بی، 14 سالہ سرفراز ولد احمد بخش، 19 سالہ رابطہ دختر حافظ ثناء اللہ، 7 سالہ محسن ولد اسلم اور 20 سالہ مہناز زوجہ سمیع اللہ کے نام سے ہوئی ہے۔ پولیس کے مطابق پانچوں افراد کا تعلق بہاولپور سے تھا۔ وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال نے ایس ایس پی ایسٹ جاوید جسکانی سے مذکورہ واقعے کی رپورٹ طلب کرلی ہے ابھی مذکورہ مقام پر آگ پر قابو پایا ہی گیا تھا کہ گلستان جوہر بلاک نمبر8 روفی ڈریم سٹی سے متصل جوگی گوٹھ میں قائم جھونپڑیوں میں اچانک آگ بھڑک اٹھی، فائر بریگیڈ کی5 گاڑیوں نے ایک گھنٹے کی جدوجہد کے بعد آگ پر قابو پایا آتشزدگی کے نتیجے میں3 افراد جھلس گئے۔ اسی ہی دوران گلستان جوہر بلاک نمبر7 میں قائم 3جھونپڑیوں میں آگ کی اطلاع پر ایک گاڑی نے فوری طور پر موقع پر پہنچ کر آگ کو بجھا دیا۔ آتشزدگی کے نتیجے میں3 جھگیاں اور سامان جل کر خاکستر ہوگیا۔

Tags: