بھارت سمجھوتہ ایکسپریس دھماکے میں ملوث کرنل پاکستان کے حوالے کرے، پرویز مشرف

October 31, 2015 5:54 pm0 commentsViews: 28

کشمیر میں مسلح جدوجہد شروع ہوئی تو لشکر طیبہ سمیت کئی عسکری تنظیموں کی بنیاد ڈالی گئی، ہم نے ان کو تربیت دی
پاکستان وہی کررہا ہے جو بھارت کرتا ہے، پاکستانی لیڈروں اور فنکاروں کے خلاف شیوسینا کے ہنگاموں پر کسی کے خلاف کارروائی نہیں ہوئی
اسلام آباد( کے پی آئی) پاکستان کے سابق صدر جنرل(ر) پرویز مشرف نے کہا ہے کہ بھارت اگر حافظ سعید کا مطالبہ کرتا ہے تو اسے اس کرنل کو پاکستان کے حوالے کرنا چاہئے جو سمجھوتہ ایکسپریس دھماکے میں ملوث ہے جس میں کئی پاکستانی مارے گئے تھے جنرل پرویز مشرف نے ایک انٹر ویو کے دوران کہا کہ جب1990ء میں کشمیر کے اندر مسلح جدوجہد آزادی شروع ہوئی تو لشکر طیبہ کے علاوہ مزید گیارہ بارہ عسکری تنظیموں کی بنیاد ڈالی گئی ہم نے ان کی حمایت اور انہیں تربیت فراہم کی کیونکہ وہ اپنی زندگیوں کو دائو پر لگا کر لڑ رہے تھے۔ ایک سوال کے جواب میں پاکستان کے سابق فوجی حکمران نے بتایا کہ ان دنوں اسامہ بن لادن، ایمن الظواہری، جلال الدین حقانی، حافظ محمد سعید اور ذکی الرحمن لکھوی جیسے عسکری کمانڈروں کو پاکستان میں ہیرو کا درجہ حاصل تھا۔ ان کا کہنا تھا کہ اس زمانے میں حافظ سعید اور لکھوی سمیت کشمیری مجاہدین آزادی ہمارے ہیرو تھے جو سرحد عبور کرکے جہاد میں حصہ لینے کیلئے آتے تھے۔ انہوں نے اس بات کا بھی اعتراف کیا کہ پاکستان نے مذہبی عسکریت کی بنیاد ڈالی اور پوری دنیا سے عسکریت پسندوں کو تربیت اور ہتھیار فراہم کرنے کے بعد سوویت یونین کے ساتھ لڑوایا۔ ان کا کہنا تھا کہ 1979 ء میں پاکستان مذہبی عسکریت کے حق میں تھا۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے طالبان کو تربیت اور ہتھیار دئیے اور انہیں روس کے ساتھ لڑنے کیلئے بھیجا، انہوں نے بتایا کہ لوگوں کو اس وقت کی صورتحال سمجھ لینا چاہئے ۔ سابق پاکستانی صدر کا کہنا تھا کہ پاکستان وہی کچھ کر رہا ہے جو بھارت کر رہا ہے۔ انہوں نے وضاحت کرتے ہوئے حال ہی میں پاکستانی لیڈروں اور فنکاروں کے خلاف شیو سینا کے ہنگاموں کی مثال پیش کی اور سوال کیا کہ بھارت میں کسی پارٹی کے خلاف کوئی کارروائی کیوں نہیں کی گئی۔

Tags: