بھارتی مسلمانوں پر ایک سے زائد شادیاں کرنے پر پابندی

October 31, 2015 6:09 pm0 commentsViews: 26

مرد کے پاس بلاوجہ طلاق دینے اور ایک سے زائد شادیاں کرنے کا حق خواتین کے حقوق کی خلاف ورزی ہے
شادی اور وارثت سے متعلق قوانین مذہب کا حصہ نہیں ہیں، مسلم پرسنل لاء میںو قت کے ساتھ ارتقاء ضروری ہے،بھارتی سپریم کورٹ
نئی دہلی( نیوز دیسک) بھارت میں مسلمانوں کے حقوق سلب کرنے کا سلسلہ جاری ہے‘ بھارتی سپریم کورٹ نے مسلمان مردوں کو بیک وقت ایک سے زائد شادیوں کے حق سے محروم کرنے پر غور شروع کردیا‘ بھارتی اخبار ٹائمز آف انڈیا کے مطابق سپریم کورٹ کا کہنا ہے کہ مسلم پرسنل لاء کے مطابق خواتین کو ان کے حقوق دیئے جارہے ہیں اور مرد کے پاس بلاوجہ طلاق دینے اور ایک سے زائد شادیاں کرنے کا حق خواتین کے حقوق کی خلاف ورزی ہے‘ جسٹس آر دیو اور اے کے گوئیل پر مشتمل بینچ کا کہنا تھا کہ شادی اور وراثت سے متعلق قوانین مذہب کا حصہ نہیں ہیں اور مسلم پرسنل لاء میں وقت کے ساتھ ارتقاء ضروری ہے‘ ان کا کہنا تھا کہ وقت آگیا ہے کہ عدلیہ ان معاملات کا جائزہ لے کہ جنہیں پہلے حکومت اور مقننہ پر چھوڑ دیا گیا تھا۔

Tags: