ف لیگ اور جونیجو برادری کے تصادم میں12ا فراد ہلاک ہوئے، نثار کھوڑو

November 2, 2015 3:22 pm0 commentsViews: 50

خیرپور میں سانگھڑ سے آئے ہوئے گروپ نے5 پولنگ اسٹیشنوں پر بھی دھاوا بول دیا
گروپ نے ڈسٹرکٹ ریٹرینگ افسر کو بھی اغواء کیا، واقعہ کی عدالتی تحقیقات کی جائے
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سینئر صوبائی وزیر اطلاعات نثار احمد کھوڑو ضلع خیر پور کے لیڈیز پولنگ اسٹیشن نمبر 2 اللہ و الاپویاں یو سی دراز شریف میں رونما ہونے والے واقعہ جس کے نتیجے میں12 قیمتی انسانی جانیں ضائع ہوئیں پر گہرے دکھ اور افسوس کا اظہار کیا ہے اور الزام لگایا ہے کہ پولنگ اسٹیشن سے باہر آئے ہوئے ضلع سانگھڑ سے تعلق رکھنے والے گروپ کی قیادت پاکستان مسلم لیگ ( ف) کے اسماعیل شاہ کر رہے تھے۔ باہر سے آنے والوں کے حملے پر مقامی افراد نے جوابی کارروائی کی۔ نثار کھوڑو نے وضاحت کرتے ہوئے کہا کہ یہاں مقامی جونیجو برادری ( سرمست گروپ) اور پاکستان مسلم لیگ ( ف) کے لوگوں اور باہر سے آئے ہوئے گروپ کے مابین تکرار جھگڑا ہوا جس کے نتیجہ میں دو مقامی لوگ جاں بحق ہوگئے جونیجو برادری نے اس پر حملہ آوروں کی کارروائی پر فائرنگ کی جس کے نتیجہ میں زیادہ اموات ہوئیں۔ نثار کھوڑو نے الزام لگایا کہ ضلع سانگھڑ سے آئے ہوئے گروپ نے الیکشن کمیشن کے ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی کرتے ہوئے5 پولنگ اسٹیشن پر بھی دھاوا بول دیا تھا انہوں نے کہا کہ مذکورہ گروپ یو سی دراز شریف پر حملے کرکے اسٹیشن ڈسٹرکٹ ریٹرننگ آفیسر مریم عباس کو اسلحہ کے زور پر اغواء کر کے لئے گئے اور گمبٹ میں چھوڑ دیا اس کے علاوہ انہوں نے ایس ایچ او اور اے ایس آئی کی بھی پٹائی کی۔ نثار کھوڑو نے کہا کہ سندھ حکومت نے چیف جسٹس سندھ ہائی کورٹ سے درخواست کی ہے کہ اس واقعہ کی عدالتی تحقیقات کی جائے۔

Tags: