خیرپور کے انتخابات کا لعدم قرار دیئے جائیں، غوث علی شاہ

November 2, 2015 3:39 pm0 commentsViews: 28

حلقے میں الیکشن میں12 افراد کی شہادت پر صوبائی حکومت کو برطرف کرکے ذمہ داروں کو گرفتار کیا جائے
کراچی میں جلد ہم خیال جماعتوں کا اجلاس بلا کر آئندہ کا لائحہ عمل طے کریں گے، پریس کانفرنس سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر) مسلم لیگ (ن) کے سینئر رہنما سابق وزیراعلیٰ سندھ سید غوث علی شاہ نے بلدیاتی انتخابات کے موقع پر خیر پور میں پر تشدد واقعات اور12 افراد کی شہادت کی شدید مذمت کرتے ہوئے الیکشن کمیشن سے مطالبہ کیا ہے کہ خیرپور کے انتخابات کو کالعدم قرار دیا جائے‘ انہوں نے سپریم کورٹ کے چیف جسٹس سے بھی مطالبہ کیا کہ ان واقعات کانوٹس لیتے ہوئے صوبائی حکومت کو برطرف کرکے ذمہ داروں کو گرفتار کرنے کے احکامات جاری کریں‘ وہ اپنی رہائش گاہ پر پریس کانفرنس سے خطاب کررہے تھے اس موقع پر علی نواز شاہ‘ بادشاہ شیخ و دیگر بھی موجود تھے‘ انہوں نے رانی پور کے واقعے کو سوچی سمجھی سازش قرار دیتے ہوئے کہا کہ اس حملے کا مقصد اسماعیل پیر اسماعیل شاہ کو جان سے مارنا تھا‘ انہوں نے کہا کہ1977 ء سے یہ واقعات تسلسل کے ساتھ جاری ہیں‘1977 ء میں قائم علی شاہ نے دھاندلی کی تھی تھی جس کی بنیاد پر انہیں 8سال کیلئے نا اہل قرار دیا گیا تھا اس کے بعد 2013 ء میں عام انتخابات کے موقع پر 4 افراد کی جانیں گئیں‘ اگر آئندہ انتخابات فوج کی نگرانی میں نہ کرائے گئے تو ایسے انتخابات کا کوئی فائدہ نہیں ہوگا اور نہ ہی یہ انتخابات شفاف ہوں گے‘ انہوں نے مزید کہا کہ کراچی میں ہم خیال جماعتوں کا جلد اجلاس طلب کرکے صورتحال پر غور اور آئندہ کا لائحہ عمل کا اعلان کیا جائیگا۔

Tags: