بھارت نے مسائل کے حل کیلئے مخلصانہ کوششوں کا مثبت جواب نہیں دیا، طارق فاطمی

November 4, 2015 4:09 pm0 commentsViews: 17

کنڑول لائن پر بھارتی اشتعال انگیزی افسوسناک ہے‘ کشمیر سمیت تمام تنازعات پر بامقصد بات چیت سے ہی امن مذاکرات کامیاب ہوں گے
بھارت میں اکثریت پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری کی خواہاں ہے‘ مانی شنکر‘ خورشید قصوری اور اعتزاز احسن کا سیمینار سے خطاب
کراچی( اسٹاف رپورٹر) وزیر اعظم کے معاون خصوصی برائے خارجہ کو امور طارق فاطمی نے کہا ہے کہ پاکستان بھارت کے ساتھ سنجیدہ امن مذاکرات چاہتا ہے۔ تاہم بھارت نے پاکستان کی امن پالیسی کا مخلصانہ جواب نہیں دیا ہے دو طرفہ تعلقات کے فروغ کے بجائے بھارت کی جانب سے عوامی رابطوں کے امور میں مشکلات کھڑی کی جا رہی ہیں امن مذاکرات اس وقت ہی کامیاب ہو سکتے ہیں جب کشمیر سمیت دیگر تنازعات پر با مقصد بات کی جائے، ان خیالات کا اظہار انہوں نے منگل کو مقامی ہوٹل میں کراچی کونسل برائے خارجہ تعلقات کے تحت پاک بھارت تعلقات کے موضوع پر منعقدہ سیمینار سے خطاب کرتے ہوئے کیا سیمینار میں پاکستان کے سابق وزیر خارجہ خورشید قصوری، سابق پاکستانی سفیر شاہد امین، سابق بھارتی وزیر مانی شنکر آئر، بھارتی دانشور نیندا کلکرانی، سابق بھارتی وزیر خارجہ سلمان خورشید، سلمان حیدر، اعتزاز احسن و دیگر رہنمائوں نے بھی خطاب کیا۔ مشیر برائے وزیر اعظم نے کہا کہ پاکستان نے مسائل کے حل کیلئے مخلصانہ کوشش کی ہے لیکن بھارت نے اس کا مثبت جواب نہیں دیا، کنٹرول لائن پر بھارتی اشتعال انگیزی قابل افسوس عمل ہے۔ اس کے پیچھے بھارت کے کیا عزائم ہیں یہ بھارت ہی جانتا ہے۔ پاک بھارت مذاکرات اس صورت میں کامیاب ہو سکتے ہیں جب دونوں حکومتیں تمام ایشوز پر باہمی گفت و شنید کریں سابق بھارتی وزیر مانی شنکر نے کہا کہ بھارت کی اکثریت پاکستان کے ساتھ تعلقات میں بہتری کی خواہاں ہے پاک بھارت مذاکرات برابری کی بنیاد پر ہونے چاہئیں سابق وزیر خارجہ خورشید قصوری نے کہا کہ یہ کہنا غلط ہے کہ بھارتی وزیر اعظم مذاکرات نہیں کرنا چاہتے ہیں۔ سینیٹر اعتزاز احسن نے کہا کہ باہمی تنازعات کے حل میں تاخیر کی وجہ سے پاک بھارت تعلقات بہتر نہیں ہو رہے ہیں دونوں حکومتوں کو چاہئے کہ وہ سنجیدہ مذاکرات کریں۔

Tags: