گرفتاری کی دفعہ معطل، شہریوں کو 3 دن تک لائسنس برانچ نہ جانے کا مشورہ

November 4, 2015 4:10 pm0 commentsViews: 28

ڈرائیونگ لائسنس نہ ہونے پر 500 روپے جرمانہ عائد ہوگا‘ لائسنس بنوانے کیلئے خصوصی مراکز قائم کئے جائیں گے
موجودہ لائسنس برانچوں میں صرف لائسنس کی تجدید ہوگی‘ ایڈیشنل آئی جی ٹریفک‘ ایجنٹ مافیا پھر بھی شہریوں سے رقم بٹورتی رہی
کراچی( اسٹاف رپورٹر) ٹریفک پولیس نے لائسنس کی موجودگی پر گرفتاری و جرمانے کی دفعہ کو مزید 3 ماہ کے لئے معطل کرنے کا اعلان کر دیا۔ لرننگ لائسنس بنوانے کیلئے آنے والے شہریوں کو بھی چند روز دفاتر آنے سے روک دیا گیا ہے، دوسری جانب منگل کو بھی شہریوں کی بڑی تعداد رات گئے تک دفاتر کے باہر قطار بنائے کھڑی رہی ایجنٹ مافیا اور کرپٹ ٹریفک اہلکاروں کے ساتھ علاقہ پولیس نے بھی لائسنس بنوانے کیلئے منہ مانگی رقم وصول کرنا شروع کر دی ہے۔ تفصیلات کے مطابق ایڈیشنل آئی جی ٹریفک خادم حسین بھٹی نے ایک حکم نامے کے تحت ٹریفک پولیس کو لائسنس کی عدم موجودگی پر گرفتاری سے روک دیا ہے انہوں نے بتایا کہ ٹریفک پولیس کے قانون کے مطابق دفعہ113/99 موٹر و ہیکل آرڈیننس کے تحت کسی بھی شخص کو ڈرائیونگ لائسنس کی عدم موجودگی پر ٹریفک پولیس کا اہلکار گرفتار کر سکتا ہے اور گرفتاری کے بعد اسے3 روز کیلئے جیل بھیجا جا سکتا ہے اور جرمانہ بھی عائد کیا جا سکتا ہے۔ انہوں نے مزید بتایا کہ ٹریفک پولیس کی جانب سے مذکورہ دفعہ کو معطل ہی رکھا گیا تھا تاہم اس کو بحال کرنے کے حکم سے امن و امان اور بد نظمی کا مسئلہ پیدا ہوا جس کو دیکھتے ہوئے مذکورہ دفعہ کو مزید3 ماہ کیلئے معطل کیا گیا ہے انہوں نے وضاحت کی کہ ٹریفک پولیس کے اہلکار لائسنس چیک کریں گے اور عدم موجودگی پر صرف500 روپے جرمانہ بھی عائد کیا جائیگا ایڈیشنل آئی جی ٹریفک نے شہر میں موجود3 لائسنس برانچوں کو انتہائی ناکافی سمجھتے ہوئے اور شہریوں کو زحمت سے بچانے کیلئے درخواست کی کہ لرننگ لائسنس بنوانے والے شہریوں کے لئے جلد ہی خصوصی مراکز قائم کرنے کے ساتھ موبائل وین بھی متعارف کروائی جائے گی۔ جس کی وجہ سے دفاتر پر بوجھ کافی کم ہو سکے گا۔

Tags: