بلدیاتی الیکشن ٹکٹوں سے محروم پی ٹی آئی امیدواروں کا کارکنوں کے ہمراہ دھرنا

November 5, 2015 5:53 pm0 commentsViews: 27

پی ٹی آئی کراچی کے آرگنائزر علی زیدی اور رکن اسمبلی خرم شیر زمان ٹکٹوں کی تقسیم میں من مانی کررہے ہیں‘ کامران منہاس
یوتھ کے کچھ کارکنان دھرنا دینے آئے تھے مگر ان کو بتادیا گیا کہ پارٹی ٹکٹس پارلیمانی بورڈ کی منظوری سے جاری کئے گئے‘ ترجمان
کراچی( اسٹاف رپورٹر) بلدیاتی انتخابات کیلئے ٹکٹوں سے محروم رہ جانے والے پی ٹی آئی امیدواروں نے کارکنوں کے ہمراہ علی زیدی کے خلاف انصاف ہائوس پر دھرنا دید یا۔ ڈسٹرکٹ سینٹرل، ویسٹ، سائوتھ اور ملیر  سے آنے والے کارکنان، برطرفی کا مطالبہ کر رہے تھے، ذرائع نے بتایا  کہ کراچی میں بلدیاتی انتخابات کی بیشتر نشستوں پر کارکنوں کو ترجیح دینے کے بجائے جماعت اسلامی کے ساتھ سیٹ ایڈ جسٹمنٹ پر پی ٹی آئی کارکن مقامی قیادت سے نالاں ہیں جس کی وجہ سے گزشتہ رات درجنوں کارکنوں نے پی ٹی آئی ہیڈ کوارٹر انصاف ہائوس پر دھرنا دیا اور علی زیدی کے خلاف ہاتھوں میں پلے کارڈ بھی اٹھا رکھے تھے جس پر گو علی زیدی گو کے نعرے درج تھے، کارکنوں کے ساتھ ضلعی عہدیدار بھی تھے۔ جن میں کامران منہاس، امجد آفریدی، معراج خان، آفتاب جہانگیر اور سرمد بلال شامل تھے۔ احتجاجی دھرنے کے شرکاء سے بات چیت کیلئے پارٹی کا کوئی اعلیٰ عہدیدار نہیںآیا۔  بعد ازاں کراچی کمیٹی کے رکن رضوان کے وہاں پہنچنے پر شرکاء اپنا احتجاج ریکارڈ کروا کر چلے گئے۔ پی ٹی آئی کے ناراض رہنما کامران منہاس نے شرکاء سے اپنے خطاب میں کہا کہ پی ٹی آئی کراچی کی آرگنائزر علی زیدی اور رکن اسمبلی خرم شیر زمان ٹکٹوں کی تقسیم پر اپنی من مانیاں کر رہے ہیں۔ پی ٹی آئی کے ترجمان کو دوا خان صابر سے بات کی گئی تو انہوں نے کہا کہ یوتھ کے کچھ کارکنان  یونین کونسل 4 سائٹ میٹروول کی سیٹ پر ٹکٹ نہ ملنے کی وجہ سے دھرنا دینے آئے تھے تاہم انہیں یہ بات سمجھا دی گئی ہے کہ پارٹی ٹکٹس پارلیمانی بورڈ کی منظوری سے جاری کئے گئے ہین جس پر علی زیدی سمیت کوئی رہنما کوئی اعتراض داخل نہیں کرا سکتا۔

Tags: