یہودیوں کی مسجد اقصیٰ میں گھس کر مقدس مقامات کی بے حرمتی

November 6, 2015 1:50 pm0 commentsViews: 31

صیہونی فوج کی مکمل سرپرستی میں مسجد اقصیٰ میں گھس گئے، مسجد کی بیحرمتی کرتے ہوئے فلسطینیوں کو نکال دیا
صیہونیوں کے اقدام پر فلسطینی سراپا احتجاج بن گئے، حماس نے آج یوم الغضب کا اعلان کر دیا
مقبوضہ بیت المقدس (یو پی پی) یہودی آباد کاروں کی بڑی تعداد نے جمعرات کو پولیس اور فوج کی سیکیورٹی میں مسجد اقصیٰ میں داخل ہوکرمقدس مقام کی بے حرمتی کی۔ یہودی آباد کاروں کی آمد کے بعد فلسطینی نمازیوں کی طرف سے ان کیخلاف شدید نعرے بازی کی گئی۔ عینی شاہدین نے بتایا کہ جمعرات کے روز32 یہودی شرپسندوں نے قبلہ اول کی بے حرمتی کی۔ یہودی آباد کار ٹولیوں کی شکل میں قبلہ اول میں داخل ہوئے اور تلمودی تعلیمات کے مطابق مذہبی رسومات ادا کرتے رہے۔ اس موقع پر صہیونی فوج نے انہیں فول پروف سیکیورٹی مہیا کر رکھی تھی۔ یہودی آباد کاروں کی آمد پر فلسطینیوں نے ان کیخلاف شدید نعرے بازی کی اور انہیں روکنے کی بھی کوشش کی مگر اسرائیلی فوج نے فلسطینیوں کو پیچھے ہٹا دیا۔ مزید بر آں اسرائیلی پولیس نے فلسطین کے مقبوضہ بیت المقدس سے تعلق رکھنے والے ایک عالم دین اور قبلہ اول میں تدریس کے فرائض انجام دینے والے مبلغ کو حراست میں لے لیا۔ گرفتار کئے گئے عالم دین کی شناخت ظاہر نہیں کی گئی، مزید بر آں حماس نے فلسطین میں آج اسرائیلی ظلم کے خلاف یوم الغضب اور وفائے شہداء و اسیران منانے کی اپیل کی ہے۔

Tags: