علاج کیلئے کوئی دوا نہیں دی جاتی بلکہ قرآنی آیات سے علاج کیا جاتا ہے غیر مسلم افراد اسلام قبول کررہے ہیں

November 6, 2015 1:53 pm0 commentsViews: 96

روحانی معالجوں کی طرف مائل آستانہ فضل ربی کے بانی نے امریکی سینڈ ٹائم ہانٹ کا علاج کامیابی سے کیا امریکہ میں آستانے کی کئی شاخیں موجود ہیں
کراچی ( وقائع نگار) روحانی طریقہ علاج میں وسعت بر صغیر سے نکل کر مشرق بعید اور امریکہ تک پھیل گئی۔ لوگوں کی بڑی تعداد جسمانی معالجوں سے تنگ آکر روحانی معالجوں کی طرف مائل ہونے لگی۔ ایک پاکستانی روحانی معالج کے امریکہ، برطانیہ ، جاپان اور مشرقی وسطیٰ میں روحانی علاج کے آستانے تیزی سے فعال ہو رہے ہیں۔ تفصیلات کے مطابق ڈاکٹروں اور حکیموں کے علاج سے بیزار لوگوں نے تیزی سے روحانی علاج کی طرف مائل ہونا شروع کر دیا ہے جعلی پیروں اور عطائی حکیموں اور ڈاکٹروں کے مقابلے میں بعض ایسے خدا رسیدہ بندے بھی ہیں جو اخلاص کے ساتھ اللہ کی مخلوق کی خدمت میں بلا تخصیص مصروف عمل ہیں۔ آستانہ فضل ربی کے بانی نوروز علی اکبر (بابو بھائی ) ہیں بابو بھائی نے ایک امریکی سینڈ ٹائم ہانٹ کا علاج کیا شفا یابی کے بعد اس امریکی سینیٹر نے بابو نوروز علی اکبر کو امریکہ میں آستانہ فضل ربی کھولنے کی اجازت امریکی حکومت سے دلوائی آج امریکہ کے متعد شہروں میں محمد نوروز علی اکبر ( بابو بھائی) کے آستانے کی شاخیں موجود ہیں جن سے ہزاروں امریکی رابطے میں رہتے ہیں اس کے علاوہ جاپان، انڈونیشیا، اور مشرقی وسطیٰ میں بھی ان کے آن لائن آستانے موجود ہیں، بابو بھائی نے بتایا کہ اب تک لاکھوں مریض اللہ کے کرم سے علاج کے ذریعے موذی امراض سے چھٹکارا پا چکے ہیں انہوں نے بتایا کہ پاکستان میں لاکھوں خود ساختہ پیر فقیر لوگوں کو دونوں ہاتھوں سے لوٹ رہے ہیں ہماری طرف سے کوئی دوا نہیں دی جاتی بلکہ قرآنی آیات سے ان کا علاج کیا جاتا ہے۔ جس کے انتہائی اچھے اثرات مرتب ہو رہے ہیں امریکہ سمیت دنیا کے کئی ممالک کے ہزاروں غیر مسلم افراد حلقہ بگوش اسلام ہو رہے ہیں بابو بھائی کا کہنا ہے کہ ان کی ان خدمات کے باعث دنیا بھر کے لاکھوں لوگ ان سے انٹر نیٹ پر رابطے میں ہیں آخر میں انہوں نے کہا کہ میری خواہش ہے کہ مرنے سے قبل یتیموں اور بیوائوں کیلئے ایسا ٹرسٹ قائم کروں جس سے انہیں زندگی کے دکھ کم کرنے میں مدد ملے۔