کینیڈین پارلیمنٹ میں پنجابی تیسری بڑی زبان بن گئی

November 7, 2015 1:32 pm0 commentsViews: 25

حالیہ انتخابات میں20 پنجابی امیدواروں نے حصہ لیا جن میں14 مرد اور 6 خواتین شامل ہیں
کینیڈا میں4 لاکھ30 ہزار705 پنجابی بستے ہیں، پنجابی پارلیمنٹ میں6 فیصد نمائندگی کرتے ہیں
اوٹاوا( یو پی پی) کینیڈین پارلیمنٹ میں پنجابیوں کی تعداد میں احالیہ اضافے کے بعد انگریزی اور فرانسیسی کے بعد پنجابی پارلیمان کی تیسری بڑی زبان بن گئی۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق دار العلوم کے19 اکتوبر کو ہونیوالے انتخابات میں20 پنجابی امیدواروں نے حصہ لیا۔ جن میں 14 مرد اور چھ خواتین ہیں اس کے علاوہ 18 لبرل اور 2کنزرویٹو امیدوار بھی ہیں۔ کینیڈا کے 2011ء کے شماریات کا گھریلو سروے کے مطابق4 لاکھ 30 ہزار 705 کینیڈین کی مادری زبان پنجابی ہے۔ اس کے بعد انگریزی اور فرانسیسی ہیں 4 لاکھ 30 ہزار 705 مقامی پنجابی بولنے والے کینیڈا کی آبادی کا 1.3 فیصد ہیں ۔ 20 پنجابی بولنے والے ارکان دار العلوم میں تقریباً 6 فیصد کی نمائندگی کرتے ہیں۔ یہ کینیڈا کی پارلیمنٹ کیلئے ایک بڑا قدم ہے اور یہ سرکاری ہے۔

Tags: