ڈرائیونگ لائسنس ٹریفک اہلکاروں کی لوٹ مار جاری‘ شہریوں میں اشتعال

November 7, 2015 1:49 pm0 commentsViews: 23

شہریوں سے تین ماہ تک ڈرائیونگ لائسنس طلب نہ کرنے کے احکامات نظر انداز‘ لائسنس نہ رکھنے والوں سے رشوت کی وصولی
رشوت نہ دینے والے شہریوں کے چالان کردیئے گئے‘ ناظم آباد‘ کلفٹن اور کورنگی میں ڈرائیونگ لائسنس برانچز پر شہریوں کا رش
کراچی( کرائم رپورٹر) ٹریفک پولیس نے اعلیٰ افسران کے احکامات کی دھجیاں اڑادیں‘ پولیس شہر کے مختلف علاقوں میں شہریوں سے ڈرائیونگ لائسنس نہ ہونے پر مبینہ طور پر رشوت طلب کرتے رہی رشوت نہ دینے والے شہریوں کے چالان بھی کئے جس کے باعث شہریوں میں شدید اشتعال پایا جاتا ہے‘ سروے کے مطابق وزیر داخلہ سندھ سہیل انور سیال اور اے آئی جی ٹریفک کی جانب سے اعلان کیا گیا تھا کہ ٹریفک پولیس شہریوں سے3ماہ تک ڈرائیونگ لائسنس طلب نہیں کریگی اور نہ ہی بغیر لائسنس ڈرائیونگ کرنے والے شہری کا چالان کیا جائیگا‘‘ جمعہ کو کئے گئے سروے میں شہر کے مختلف علاقوں بالخصوص میٹھا در‘ کھارادر‘ پریڈی‘ ماڑی پور اور کینٹ ٹریفک سیکشن کے بیشتر افسران و ا ہلکار لائسنس مہم کا فائدہ اٹھاتے نظر آئے‘ ان سیکشنز کے ٹریفک پولیس کے افسرن و اہلکاروں نے متعدد شہریوں کو روک کر ان سے لائسنس طلب کئے جن کے پاس لائسنس موجود نہیں تھے‘ ان سے رشوت بھی وصول کیاور جس نے رشوت نہیں دی اس کیخلاف چالان کئے‘ یہ چالان پولیس نے لائسنس نہ ہونے کی مد میں نہیں بلکہ ہیلمنٹ‘ٹریفک سگنل کی خلاف ورزی وار دیگر چیزوں پر چالان کئے گئے تاکہ پولیس کے اعلیٰ افسران کو چکما دے سکیں‘ ٹریفک پولیس کے اس عمل پر شہریوں میں شدید اشتعال پایا جاتا ہے‘دوسری جانب شہری اب تک خوف زدہ ہیں کہ لائسنس نہ ہونے کے سبب جیل نہ جانا پڑ جائے جس کی وجہ سے جمعہ کو ناظم آباد ‘کلفٹن اور کورنگی ڈرائیونگ لائسنس برانچ کے باہر ڈرائیونگ لائسنس بنانے والوں کا رش موجود تھا۔

Tags: