سندھ میںامیدواروں کی گرفتاریاں قبل ازوقت دھاندلی ہے‘ متحدہ

November 9, 2015 5:23 pm0 commentsViews: 21

29 بلدیاتی امیدواروں کو گرفتار کیا جاچکا ہے‘ سکھر سے 28 اکتوبر کو 21 کارکنان کو گرفتار کیا گیا‘ خواجہ اظہار الحسن
دشمن قوتوں نے ٹارگٹڈ آپریشن کا رخ ایم کیو ایم کی جانب موڑ دیا‘ پری پول رکنگ کا وزیراعظم اور وزیر داخلہ نوٹس لیں
کراچی( اسٹاف رپورٹر) سندھ اسمبلی میں ایم کیو ایم کے اپوزیشن لیڈر خواجہ اظہار الحسن نے کہا ہے کہ سندھ پولیس کے مختلف شہروں  بالخصوص کراچی میں ایم کیو ایم کے نامزد بلدیاتی امیدواروں کی گرفتاریاں بلدیاتی انتخابات کے تیسرے مرحلے میں سندھ حکومت کی جانب سے قبل از انتخاب دھاندلی کی سازش ہے۔  کراچی میں بلدیاتی انتخابات کے دوران ہمارے 29 کارکنان کو پولیس نے گرفتار کیا ہے۔ سکھر میں28 اکتوبر کو21 کارکنان  کو سندھ پولیس نے گرفتار کیا، لاڑکانہ میں انتخابی جلسے پر پولیس نے دھاوا بولا اور نامزد امیدواران کو حراساں کیا جبکہ جامشورو میں نامزدگی سے دستبرداری کیلئے پیپلز پارٹی کی ایماء پر حق پرست بلدیاتی امیدواران کو حراساں کیا گیا تھا،۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے اتوار کی شام خورشید بیگم سیکریٹریٹ میں حق پرست ارکان اسمبلی کے پر ہجوم پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ اس موقع پر ارکان سندھ اسمبلی عظیم فاروقی، ریحان ظفر، خالد افتخار اور وسیم قریشی ان کے ہمراہ تھے۔ انہوں نے کہا کہ جیسے جیسے  الیکشن آرہے ہیں پولیس کی جانب سے حق پرست امیدواروں اور کارکنان کی بلا جواز گرفتاریوں میں بھی تیزی دیکھنے میں آرہی ہے۔ گزشتہ19 دن کے دوران پولیس نے ایم کیو ایم کے کارکنان اور حق پرست امیدواران کو گرفتار کیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ اوچھے ہتھکنڈے استعمال کرکے عوام کی ہمدریاں حاصل نہیں کی جا سکتی اور حق پرست عوام بلدیاتی انتخابات میں عوام کے ووٹ کی طاقت سے سندھ حکومت کے حربوں کو ناکام بنائیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایم کیو ایم نے کراچی میں قیام امن دہشت گردی کے خاتمے کیلئے کراچی ٹارگٹڈ آپریشن کی نہ صرف حمایت کی بلکہ اس کا مطالبہ بھی سب سے پہلے کیا تھا لیکن بعض ایم کیو ایم دشمن قوتوں نے اس ٹارگٹڈ آپریشن کو کراچی سے دہشت گردوں، جرائم پیشہ عناصر کے خاتمے کے بجائے ایم کیو ایم کے خاتمے کی طرف موڑ دیا ہے۔ خواجہ اظہار الحسن نے انتخابات کی مانیٹرنگ کرنیوالی ملکی و بین الاقوامی تنظیموں سے اپیل کی ہے کہ وہ بلدیاتی الیکشن میں حکومت کی جانب سے بلدیاتی انتخابات کے ضابطہ اخلاق کی دھجیاں بکھیر نے اور بلدیاتی الیکشن میں ایم کیو ایم کو سیاسی مقاصد کے حصول کیلئے پولیس کا استعمال کرکے دیوار سے لگانے کی سازش  کا نوٹس لیں۔ انہوں نے وزیر اعظم نواز شریف، وفاقی وزیر داخلہ چوہدری نثار علی خان، الیکشن کمیشن آف پاکستان سے مطالبہ کیا کہ بلدیاتی الیکشن میں حکومت سندھ کی جانب سے محکمہ پولیس کے غیر قانونی استعمال اور بلدیاتی الیکشن میں پری رول ریکنگ جیسے ہتھکنڈوں کا نوٹس لیا جائے۔

Tags: