دھاندلیوں کیخلاف ن لیگ کا الیکشن کمیشن دفتر پر احتجاج دھرنا

November 9, 2015 5:34 pm0 commentsViews: 23

دو گھنٹے تک جاری رہنے والے دھرنے میں یونائیٹڈ پارٹی بھی شامل الیکشن کمیشن سندھ کو دھاندلی کے ثبوت پیش کیے
دھرنے کی قیادت نہال ہاشمی، اسلم ابڑو و دیگر نے کی، سیکڑوں کارکنوں کی بینرز اور پلے کارڈ کے ہمراہ شرکت
کراچی نیوز ڈیسک) پاکستان مسلم لیگ (ن) اور سندھ یونائیٹڈ پارٹی کی جانب سے ہفتہ کو سندھ میں بلدیاتی انتخابات کے پہلے مرحلے میں دھاندلی اور خیر پور واقعہ کیخلاف الیکشن کمیشن سندھ کے دفتر کے باہر احتجاجی مظاہرے کی قیادت مسلم لیگ (ن) سندھ کے صد اسماعیل راہو‘ جنرل سیکریٹری سینیٹر نہال ہاشمی‘ سیکریٹری اطلاعات محمد اسلم ابڑو‘ کراچی کے جنرل سیکریٹری خواجہ طارق نذیر‘ عرفان اللہ مروت اور رکن سندھ اسمبلی ہمایوں خان نے کی‘ دھرنے میں مسلم لیگ (ن) اور سندھ یونائیٹڈ پارٹی کے کارکنوں کی ایک کثیر تعداد نے شرکت کی‘ مظاہرے کے شرکاء نے پہلے کارڈز اور بینرز اٹھا رکھے تھے جن پر لاٹھی گولی کی سرکار نہیں چلے گی‘ الیکشن کمیشن نا منظور سمیت دیگر نعرے درج تھے‘ مظاہرہ اور دھرنا تقریباً دو گھنٹے تک جاری رہا اس دوران صوبائی الیکشن کمشنر تنویر ذکی الیکشن کمیشن کے دفتر سے باہر آئے اور انہوں نے مسلم لیگ (ن) کے صدر اسماعیل راہو‘ سینیٹر نہال ہاشمی‘ اسلم ابڑو سمیت دیگر رہنمائوں سے ملاقات کی‘ مسلم لیگی رہنمائوں نے انہیں دھاندلی کے تصاویری ثبوت‘ جعلی شناختی کارڈ پیش کئے‘ انہوں نے مطالبہ کیا کہ دوسرے اور تیسرے مرحلے میں عدلیہ اور رینجرز کی نگرانی میں انتخابات کرائے جائیں۔