صدر میں اسلحہ کی دکان پر چھاپہ‘ پاک فوج کے زیر استعمال آلات برآمد

November 11, 2015 5:12 pm0 commentsViews: 25

جرائم پیشہ عناصر کو فروخت کی اطلاع پر چھاپہ مارا گیا تھا جہاں سے مسلح افواج کے زیر استعمال اسلحہ سے متعلق آلات برآمد ہوئے
اسلحہ کی فروخت کی غلط انٹریز کے علاوہ سانحہ صفورا سے تعلق اسلحہ ڈیلر سے مشترکہ ٹریڈنگ کا ریکارڈ بھی برآمد کیا گیا
کراچی( کرائم رپورٹر) ایف آئی اے نے صدر میں اسلحہ کی دکان پر چھاپہ مار کر ممنوعہ اسلحہ بر آمد اور خرید و فروخت کا ریکارڈ  قبضے میں لے لیا۔ ایف آئی اے ذرائع کے مطابق لکی اسٹار  کے قریب واقع اسلحہ کی دکان پر چھاپہ مبینہ طور پر جرائم پیشہ عناصر کو اسلحہ کی فروخت کی اطلاعات پر مارا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ایف آئی اے نے اسلحہ ڈیلر کی دکان سے مسلح افواج کے زیر استعمال اسلحے سے متعلق آلات بر آمد کر لئے اسلحہ کی خرید و فروخت کی غلط انٹریز کے علاوہ سانحہ صفورا گوٹھ سے تعلق کے حامل اسلحہ ڈیلر سے مشترکہ ٹریڈنگ کا ریکارڈ بھی بر آمد کر لیا گیا۔ ایف آئی اے نے معروف اسلحہ ڈیلر حارث اقبال کو چند روز قبل کھیپ اور کوریئر کمپنی کے گفٹ پیکٹس کے ذریعے بیرون ملک سے اسلحہ منگوانے کے الزمات میں مقدمہ گرفتار کیا تھا۔ مذکورہ مقدمے میں ملزم پاکستانی نژاد  آسٹرین شہری ممتاز الدین کو100 کے قریب دنیا کے مہنگے ترین گلوک نامی نائن ایم ایم پستول پارٹس کی شکل میں مختلف پروازوں کے ذریعے پاکستان اسمگل کرنے پر گرفتار کیا گیا تھا۔ ملزم نے دوران تفتیش  حارث نامی ملزم کے علاوہ دیگر اسلحہ ڈیلر اور افراد کیلئے نائن ایم ایم پستول لانے کا انکشاف کیا تھا۔ جس پر مقدمے میں4 اسلحہ ڈیلرز اور نادرا کے سابق ایڈمن ڈائریکٹر ریٹائرڈ کرنل حفیظ کو بطور نامزد ملزم نامزد کیا گیا تھا تفتیشی ٹیم کی جانب سے صدر میں واقع ملزم الحارث ٹریڈرز نامی دکان پر کی جانے والی کارروائی میں افواج پاکستان کے زیر استعمال اسلحے سے متعلق ڈبل ٹو تھری رائفل کی بیرلز کے علاوہ گرافک سائنس نامی آلات سمیت درجن سے زائد آلات بر آمد کئے ہیں۔

Tags: