کے ڈی اے کی پائپ فیکٹری واٹربورڈ کے حوالے کرنے کا مطالبہ کردیا گیا

November 12, 2015 8:24 pm0 commentsViews: 33

سندھ حکومت کے واضح احکامات کے باوجود پائپ فیکٹری تاحال واٹربورڈ کو نہیں دی گئی ہے، مصباح الدین فرید
کراچی (سٹی رپورٹر) کراچی واٹر اینڈ سیوریج بورڈ کے منیجنگ ڈائریکٹر مصباح الدین فرید نے کہا ہے کہ 32 ایکٹراراضی پر محیط کالعدم KDA پائپ فیکٹری جو کہ واٹر بورڈ کی ملکیت ہے اسے فوری طور پر واٹر بورڈ کے حوالے کی جائے جو کہ حکومتِ سندھ کے واضح احکامات کے باوجود بلدیہ عظمیٰ کراچی نے KDA پائپ فیکٹری کی ملکیت تا حال واٹر بورڈ کو منتقل نہیں کی جبکہ سابق وزیر بلدیات نے پائپ فیکٹری کے حوالے کر نے سے متعلق ایک اعلیٰ سطحی با اختیار کمیٹی تشکیل دی تھی جس نے پائپ فیکٹری کو واٹر بورڈ کی ملکیت تسلیم کر تے ہوئے تمام معاملات کا تفصیلی جائزہ لینے کے بعد یہ فیصلہ کیا تھاکہ پائپ فیکٹری چو نکہ واٹر ونگ کی تھی لہٰذاپائپ فیکٹری واٹر بورڈ کو دے دی جائے فیصلہ کی توثیق صوبائی وزیر بلدیات سید ناصر حسین شاہ نے بھی کر دی ہے کیو نکہ واٹر بورڈ اس فیکٹری کو آسانی سے چلا سکے گا جس میں واٹر بورڈ نہ صرف پانی و سیوریج کی لائنوں کی تبدیلی بلکہ جاری عظیم تر منصوبو ں کے لئے بھی اپنی ضرورت کے مطابق پائپ بنا سکے گا،چونکہ مارکیٹ میں دستیاب پائپ غیر معیاری ہو تے ہیں جو واٹر بورڈ مجبوری میں خرید رہا ہے خاص طور پر سیو ریج کے پائپ جومعیاری نہیں ہو تے فیکٹری ملنے پر اس سے حسب ضرورت پائپ تیار کر نے سے واٹر بورڈ کے اخراجات میں بھی نمایاں کمی ہوگی ۔

Tags: