اسلام آباد میں نفاذ شریعت کیلئے جامعہ حفصہ کی طالبات متحرک

November 16, 2015 5:29 pm0 commentsViews: 165

مولانا عبدالعزیز کی جانب سے تحریک کا اعلان کیے جانے کے بعد طالبات نے ضروری سامان کے ہمراہ جامعہ حفصہ کا رخ کر لیا
مولانا اور انکی اہلیہ کی کڑی نگرانی شروع، دیہی علاقوں اور بند گلیوں کو تبلیغ کیلئے مختص کر دیا گیا، مالی تعاون کی یقین دہانیاں
اسلام آباد( نیوز ڈیسک) وفاقی دار الحکومت میں نفاذ شریعت کیلئے متحرک جامع لال مسجد کے امیر مولانا عبدالعزیز کی جانب سے تحریک کا اعلان کئے جانے کے بعد طالبات نے ضروری سامان کے ساتھ جامعہ حفصہ کا رخ کر لیا۔ ان علاقوں کے مدارس اور بند گلیوں کو اسلام کی تبلیغ کیلئے مختص کر دیا گیا ہے۔ اسلام پسند خاندانوں کی جانب سے مالی امداد کیلئے بھی پیغامات دئیے جا رہے ہیں۔ ذرائع کے مطابق وزارت داخلہ کی جانب سے ہدایات کے بعد لال مسجد کے امیر مولانا عبدالعزیز اور ان کی اہلیہ ام حسان کی نقل و حرکت پر گہری نظر رکھی جا رہی ہے تاہم کسی بھی قسم کے تصادم سے ہر ممکن طور سے بچنے اور پیشگی اطلاع کی بھی سیکورٹی اداروں کو ہدایات جاری کی گئی ہیں اس مقصد کیلئے ایس ایس پی آپریشن، ایس پی انویسٹی گیشن، اسپیشل برانچ اور دیگر سیکورٹی اداروں کے اعلیٰ افسران پر مشتمل کمیٹی بھی تشکیل دی گئی۔ واضح رہے کہ لال مسجد کے امیر مولانا عبدالعزیز کے خلاف تھانہ آبپارہ میں دو مختلف مقدمات میں وارنٹ گرفتاری بھی جاری ہیں تاہم ان کی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی ہے۔

Tags: