سندھ میں بجلی پیدا کرنیوالے 4منصوبے ٹھپ

November 18, 2015 5:27 pm0 commentsViews: 21

حکومت کی عدم دلچسپی کے باعث ہوا سے 250 میگاواٹ بجلی کے منصوبے کھٹائی میںپڑ گئے
اسلام آباد( یو پی پی) حکومت کی عدم دلچسپی کے باعث سندھ میں متبادل ذرائع توانائی سے ڈھائی سو میگا واٹ کے4 منصوبے سست روی کا شکار ہوگئے۔ ذرائع کے مطابق سندھ میں جم پیر اور گھارو میں ہوا سے بجلی پیدا کرنے کے250 میگا واٹ کے4 منصوبے شروع کئے گئے جو کہ2017-18 تک مکمل ہونے تھے۔ ان منصوبوں پر یو ایس ایڈ براہ راست پیسے خرچ کرتی ہے۔ ساری مشینری فنڈ فراہم کرنے والے ادارے خود کرتے ہیں۔ ان میں حکومت براہ راست مداخلت نہیں کر سکتی جس کی وجہ سے حکمرانوں کی دلچسپی نہ ہونے کے برابر ہے۔ ذرائع نے مزید بتایا کہ ایک سروے کے دوران ان علاقوں میں5000 میگا واٹ بجلی ہوا سے حاصل ہو سکتی ے۔ لیکن ان میں کمیشن نہ ہونے کے باعث یہ منصوبے کھٹائی میں پڑتے نظر آرہے ہیں۔