اردو بازار میں صرف دو چھوٹے تاجروں کیخلاف ایکشن

November 23, 2015 3:37 pm0 commentsViews: 18

9بڑے مگرمچھوں نے جعلی کتب کا دھندہ عروج پر پہنچا دیا
روک تھام کا ٹھیکہ لینے والی کمپنی روونگ سورس صرف دو چھوٹے تاجروں کو گرفتار کرکے واپس چلی گئی، مقصدصرف بڑے تاجروں کو تحفظ فراہم کرنا تھا
یہ مافیا بین الاقوامی کتب چھاپ کر قومی خزانے کو کروڑوں کا نقصان پہنچا رہی ہے، ایف آئی اے بھی ان کے سامنے بے بس ہوگئی، ذرائع
کراچی( کرائم رپورٹر) کراچی میں جعلی کتب کی چھپائی اور خرید و فروخت کی روک تھام کا ٹھیکہ لینے والی کمپنی(Roving Source) کے نمائندے اردو بازار کی جعلی کتب مافیا کے2چھوٹے بیوپاریوں کیخلاف کارروائی کے بعد واپس چلے گئے‘ جبکہ اردو بازار مافیا کے9بڑے ڈیلروں کیخلاف کوئی قانونی کارروائی عمل میںنہیں لائی گئی‘ میڈیکل کی جعلی کتب کی فروخت کے سیزن کا آغاز ہونے سے قبل چھوٹے ڈیلروں کیخلاف کارروائی بڑے ڈیلروں کو تحفظ فراہم کرنا تھا‘ روونگ سورس کی نمائندوں کی لاہور واپسی کے بعد جعلی کتب مافیا نے دھڑلے سے جعلی کتب کا دھندا شروع کردیا ہے‘ ایف آئی اے بھی جعلی کتب مافیا کے سامنے بے بس ہوگئی‘ یہ مافیا بین الاقوامی پبلشر کی جعلی کتب چھاپ کر قومی خزانے کو سالانہ کروڑوں روپے کا نقصان پہنچارہی ہے۔ تفصیلات کے مطابق انتہائی باخبر ذرائع نے انکشاف کیا ہے کہ بین الاقوامی پبلشرز کی جانب سے پاکستان میں جعلی کتب کی چھپائی اور اس کی فروخت کی روک تھام کیلئے بعض اداروں کو یہ اختیارات دیئے تھے ہیں کہ وہ ان کی طرف سے جعلی کتب چھاپنے اور انہیں فروخت کرنے والوں کیخلاف کارروائی کریں‘ لیکن اس حوالے سے قائم اداروں کی جانب سے جعلی کتب مافیا سے ہی معاملات طے کرلئے گئے ہیں اور صرف چھوٹے ڈیلروں کیخلاف کارروائی کرکے بڑے ڈیلروں کو تحفظ فراہم کیا جارہا ہے۔

Tags: