مقبوضہ کشمیر،3نوجوانوں کے قتل کیخلاف مظاہرے،پاکستانی پرچم لہراہاگیا

November 25, 2015 4:27 pm0 commentsViews: 20

وزیراعلیٰ مفتی سعید کے گھر کا گھیرا ئواور پتھرائو،مظاہرین نے کئی گھنٹے دھرنا بھی دیا
سیکورٹی فورسز کی مظاہرین پر لاٹھی چارج اور آنسو گیس کی شیلنگ، سینکڑوں زخمی و گرفتار
سرینگر ( اے این این) مقبوضہ کشمیر میں3 کشمیری نوجوانوں کے کی شہادت کے خلاف مظاہرین نے پاکستانی پرچم لہرایا اور احتجاجاً کٹھ پتلی ریاستی وزیر اعلیٰ مفتی سعید کے گھر کا گھیرائو کرتے ہوئے اس پر پتھرائو بھی کیا۔ واضح رہے کہ بھارتی پولیس نے3 کشمیری نہتے نوجوانوں کو فائرنگ کرکے قتل کر دیا تھا۔ احتجاج کرنے والوں کی بڑی تعداد نے وزیر اعلیٰ مفتی سعید کے گھر کے باہر دھرنا بھی دیا جبکہ بھارتی سیکورٹی فورسز نے مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ان پر بہیمانہ لاٹھی چارج کرنے کے ساتھ آنسو گیس کا بھی استعمال کیا جس سے بیسیوں کشمیری مظاہرین زخمی ہوگئے۔ اس دوران متعدد کو گرفتار کیا گیا۔ دوسری جانب حریف کانفرنس( جموں و کشمیر) رہنما اور فریڈم پارٹی کے سربراہ شبیر احمد شاہ نے کپواڑہ میں بھارتی فوج کے ہاتھوں کشمیری نوجوانوںکی شہادت کو انسانی قدروں کی پامالی قرار دیا ہے۔ ایک پیغام میں شبیر احمد شاہ نے کہا کہ راجستھان میں چار کشمیری نوجوانوں کی عمر قید کی سزا انسانی قدروں کی پامالی کے مترادف ہے۔ جبکہ فریڈم پارٹی کے جنرل سیکریٹری مولانا عبداللہ طاری نے کہا کہ ریاستی حکام ہوس اقتدار میں کئے گئے وعدے بھی بھول بیٹھے اپنے بیان میں انہوں نے سید علی گیلانی شبیر احمد شاہ، نعیم احمد خان، سیدہ آسیہ اندرابی، تحریک حریت کے قائدین و مزاحمتی تنظیموں کے زعماواراکین کی مسلسل نظر بندی اور گرفتاری پر شدید رد عمل کا اظہار کیا۔

Tags: