دگنا ٹیکس کراچی سمیت سندھ بھر میں CNGاسٹیشن بند کرنے کی دھمکی

November 25, 2015 4:32 pm0 commentsViews: 24

سالانہ 32ارب روپے کا ٹیکس ادا کرنے والی صنعت کو کیوں تباہ کیا جارہا ہے، سندھ میں ایل این جی لانے کی کوشش کی جارہی ہے
حکمران آئی ایم ایف کی جی حضوری کے بجائے ملکی مفاد میں کام کریں، ٹیکس وصولی کا دہرا نظام چل رہا ہے، سلیمان شبیر جی ودیگر
کراچی( کامرس رپورٹر) سی این جی اسٹیشن مالکان نے گیس بلوں میں دگنا ٹیکس لگانے پر احتجاجاً 30 نومبر سے کراچی میں سندھ بھر میں سی این جی اسٹیشنز بند کرنے کی دھمکی دے دی ہے۔ آل کراچی پاکستان سی این جی ایسوسی ایشن سندھ زون کے اراکین نے منگل کو مطالبات کے حق میں احتجاج کرتے ہوئے شاہراہ فیصل کو بندکردیا۔ ایسوسی ایشن کے چیئر مین سلیمان شبیر جی نے دیگر رہنمائوں کے ساتھ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ پہلے ہی عدالتی احکامات پر17 فیصد ٹیکس ادا کر رہے تھے لیکن اب فیڈرل بورڈ آف ریونیو ( ایف بی آر) نے سیلز ٹیکس 1990 کے ایکٹ میں ترمیم کرکے مزید17 فیصد اضافہ کرکے یہ ٹیکس34 فیصد کر دیا ہے۔ اس بوجھ کو اٹھانا ہمارے بس سے باہر ہے، اگر یہ ٹیکس سی این جی اسٹیشنز سے وصول کئے گئے تو سندھ میں شدید بحران پیدا ہونے کا خدشہ ہے۔ انہوں نے کہا کہ اگر یہ فیصلہ واپس نہیں لیا گیا تو 30 نومبر سے سی این جی اسٹیشنز کو بند کر دیا جائے گا، شبیر سلیمان کا کہنا تھا کہ سالانہ32 ارب کا ٹیکس ادا کرنے والی صنعت کو جان بوجھ کر تباہ کیوں کیا جا رہا ہے۔ اس طرح کے ہتھکنڈے سندھ میں ایل این جی لانے کی کوشش ہے جو ہفتے میں ایک دن آکر3 دن کیلئے بند ہوجاتی ہے۔ شبیر سلیمان جی نے کہا کہ ایف بی آر نے ہمیں10 روز کا نوٹس دیا ہے اور ہم5 دن بعد سندھ بھر کے سی این جی اسٹیشنز بند کر دیں گے۔ لیکن ہمیں سپریم کورٹ کے فیصلے کا انتظار ہے۔ اور اگر ہم پر دبائو ڈالا گیا تو تمام سی این جی اسٹیشن مستقل بند کرکے چابیاں وزیر خزانہ اسحاق ڈار کے حوالے کر دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ ایس ایس جی سی کے سابق ایم ڈی شعیب وارثی سندھ کے سی این جی اسٹیشنز کو ہفتے میں5 دن بند کرکے سندھ کے سی این جی اسٹیشنز ایل این جی پر منتقل کرنے کی سازش کرتے رہے مگر انہیں ناکامی کا سامنا کرنا پٖڑا، اب بھی ایل این جی ہم پر تھوپی جا رہی ہے مگر ہم یہ سازش کامیاب نہیں ہونے دیں گے۔ انہوں نے کہا کہ حکمران آئی ایم ایف کی جی حضوری کرنے کے بجائے ملکی مفاد میںعملاً کام کریں، ٹیکس اتھارٹی ٹیکس وصولی میں ٹیکس کا دہرا نظام اپنائے ہوئے ہیں۔

Tags: