لیاقت آباد میں دوسرے دن بھی دکانوں سے چوری تاجروں کا احتجاج

November 25, 2015 4:44 pm0 commentsViews: 22

مسلح ملزمان 10دکانوں کے تالے توڑ کر لاکھوں روپے کا سامان چوری کرکے فرار، تاجروں کے مظاہرے کے باعث روڈ بند
تھانے کے ساتھ واقع مارکیٹ میں مسلسل دو دن ڈکیتی ہونا پولیس کے لئے لمحہ فکریہ ہے ،مظاہرین
کراچی (کرائم رپورٹر) لیاقت آباد میں دوسرے روز بھی نقب زنی کی واردات ملزمان 10دکانوں کے تالے توڑ کر لاکھوں روپے مالیت کا سامان چوری کر کے فرار ہوگئے ، دو روز کے دوران دو بار ہونے والی نقب زنی کی واردات پر تاجر سراپا احتجاج ہوگئے ٹریفک کی روانی بری طرح متاثر ہوئی ۔ پولیس مذکورہ گروپ کا سراغ لگانے میں ناکام ہوگئی۔ تفصیلات کے مطابق ، تفصیلات کے مطابق لیاقت آباد تھانے کی حدود فردوس شاپنگ سینٹر کے عقب میں واقع شاپنگ بیگ اور مرغی کی دکان سمیت 10 سے زائد دکانوں کے تالے توڑ کر مسلح ملزمان لاکھوں روپے کا سامان لوٹ کر باآسانی فرار ہوگئے ، دکانداروں نے منگل کی صبح فردوس شاپنگ سینٹر کے سامنے پولیس کے خلاف احتجاجی مظاہرہ کیا اور روڈ کو عام ٹریفک کیلئے بند کردیا جس کے باعث مذکورہ روڈ پر گاڑیوں کی لمبی قطاریں لگ گئی، دکانداروں کا کہنا تھا کہ پیر کے روز مسلح ملزمان فردوس شاپنگ سینٹر میں قائم سلیم جیولرزکی دکان کے تالے توڑ کر ملزمان 5 لاکھ روپے سے زائد مالیت کے طلائی زیورات اور نقدی لوٹ کر فرار ہوگئے تھے،دکانداروں کا کہنا تھا کہ ہم لوگ منگل کے روز اپنی دکانیں کھولنے کیلئے آئے تو دکانوں کے تالے ٹوٹے ہوئے تھے ،مظاہرین کا کہنا تھا کہ تھانے کے ساتھ واقعہ مارکیٹ میں ڈکیتی کی واردات پولیس کیلئے لمحہ فکریہ ہے،تاہم پولیس افسران موقع پر پہنچ گئے، اور مذاکرات کے بعد مظاہرین کو منتشر کردیا، تاجروں کا کہنا ہے کہ کبھی امن و امان کی خراب صورتحال کے باعث کام دھندا نہیں ہوتا اب چوری ڈکیتی کی وارداتیں اتنی بڑ ھ گئی ہیں کہ کبھی پوری دکان لوٹ لی جاتی ہے اور کبھی لوگوں سے ملزمان دن دیہاڑے اسلحے کے زور پر لوٹ مار کر کے فرار ہوجاتے ہیں اب شہر میں ٹارگٹ کلنگ اور بھتہ خوری میں کمی آئی ہے تو لوٹ مار نے شہریوں کی زندگیاں اجیرن کردی ہیں جس کی روک تھام کے لیے کوئی اقدامات نہیں اٹھائے جارہے ہیں ۔

Tags: